Monday, October 3, 2022

امریکی معیشت پر خطرے کے سائے منڈلانے لگے،آئی ایم ایف نے خبردار کردیا

امریکی معیشت پر خطرے کے سائے منڈلانے لگے،آئی ایم ایف نے خبردار کردیا

واشنگٹن  ( 92 نیوز) امریکی معیشت پرخطرے کے سائے منڈلانے لگے، عالمی مالیاتی ادارے نے امریکا کو ممکنہ معاشی خدشات سے آگاہ کردیا ۔ مالیاتی ادارے کے مطابق رواں برس امریکا کا جی ڈی پی 6.6 فیصد کم ہونےکے امکانات واضح ہیں جبکہ دوسری سہ ماہی کا جی ڈی پی 37 فیصد تک کم ہونے کے خدشات ہیں۔

امریکا جیسا ترقی یافتہ ملک بھی کورونا وائرس کے اثرات سے محفوظ نہ رہ سکا۔ عالمی مالیاتی ادارے  ( آئی ایم ایف ) کا کہنا ہے کہ اس معاشی بحران کا سب سے زیادہ نقصان غریب طبقے کوبرداشت کرنا پڑے گا۔ جی ڈی پی میں کمی کے باعث امریکی حکوت کی جانب سے کورونا سے متاثرہ خاندانوں کیلئے جاری امدادی سرگرمیوں میں بھی کمی واقع ہوگی۔  

کورونا وائرس کی وبا نے امریکا میں موجود طبی سہولیات کوبھی بے نقاب کردیا ہے۔ عالمی مالیاتی ادارے کا کہنا ہے کہ امریکا میں میڈیکل کیئر کا نظام کچھ ایسا ہے کہ جس سے کم آمدنی والے خاندان پوری طرح مستفید نہیں ہو سکتے۔

 کورونا کی وبا نے مزدور پیشہ افراد کا گزر بسرمشکل کر دیا ہے اوربےروزگاری کی شرح میں بھی اضافہ ہوا ہے۔

دوسری جانب امریکی فیڈرل ریزرو کا کہنا ہے کہ ملک بھر میں معاشی سرگرمیوں میں اضافہ ہوا ہے مگر یہ کورونا وائرس سے پہلے ہونے والی معاشی سرگرمیوں کے مقابلے میں بہت کم ہے۔

ماہرمعاشیات نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ امریکا ایک بڑے معاشی بحران کا شکارہونے والا ہے اور یہ بحران 2008 کے معاشی بحران سے کہیں زیادہ سنگین ہو سکتا ہے۔