Monday, July 15, 2024

توشہ خانہ جعل سازی کیس، بشریٰ بی بی کی ضمانت میں 12 ستمبر تک توسیع

توشہ خانہ جعل سازی کیس، بشریٰ بی بی کی ضمانت میں 12 ستمبر تک توسیع
September 7, 2023 ویب ڈیسک

اسلام آباد (92 نیوز) - توشہ خانہ جعل سازی کیس میں اسلام آباد کی مقامی عدالت نے چیئرمین تحریک انصاف کی اہلیہ بشریٰ بی بی کی ضمانت میں 12 ستمبر تک توسیع کردی۔

ایڈیشنل سیشن جج طاہر عباس سپرا نے سماعت کی۔۔ بشری بی بی اپنے وکلا سلمان صفدر کے ہمراہ عدالت میں پیش ہوئیں۔

دوران سماعت تفتشی افسر نے مؤقف اپنایا کہ بشری بی بی کی گرفتاری مطلوب ہے، ان کی آڈیو فرانزک کیلئے بھیجی ہوئی ہے، وکیل سلمان صفدر نے دلائل دیتے میں کہا کہ تین تین گھنٹے بلایا جاتا ہے اور بٹھائے رکھتے ہیں ،تفتیش کے دوران بتایا بھی گیا کہ آڈیو بشری بی بی کی نہیں۔ عدالت نے استفسار کیا کہ معاملہ رسیدوں کا ہے تو آڈیو کہاں سے آگئی۔ ایف آئی آر کے مطابق کیس کو لے کر چلیں۔ تفتیشی افسر نے بشری بی بی کی وائس میچنگ کیلئے وقت دینے جبکہ ملزمہ کے وکلا نے دلائل کے لیے مہلت کی استدعا۔ جسے عدالت نے منظور کرتے ہوئے سماعت 12 ستمبر تک ملتوی کر دی۔

دوسری جانب توشہ خانہ کیس سے متعلق نیب تحقیقات کے سلسلہ میں بشریٰ بی بی نیب راولپنڈی کے دفتر پہنچیں۔۔۔ذرائع کے مطابق نیب کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے بشری بی بی کا بیان ریکارڈ کیا اور کیس سے متعلق پوچھ گچھ کی۔۔ دوسری جانب 190 ملین پاؤنڈ سکینڈل تحقیقات کے سلسلہ میں سابق وزر سینیٹر ثانیہ نشتر اور ملک امین اسلم بھی نیب آفس میں پیش ہوئے، نیب نے رقم منتقلی کے حوالے سے مختلف سوالات کیے۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ ملک امین اسلم نے بطور گواہ بیان ریکارڈ کرایا۔۔ ثانیہ نشتر سے پوچھ گچھ کی اندورنی کہانی بھی سامنے آ گئ۔ کابینہ میٹنگ میں شہزاد اکبر نے خفیہ لفافہ دیکھایا، انھوں نے بتایا کہ ہمیں بس کہا گیا کہ اس پر دستخط کئیے جائیں۔ ثانیہ نشتر کی جانب سے دو سابق وزرا کے نام نیب ٹیم کو بتائے گئے۔