Friday, August 12, 2022

سندھی لوک گلوکار الن فقیر کو مداحوں سے بچھڑے 22 برس بیت گئے

سندھی لوک گلوکار الن فقیر کو مداحوں سے بچھڑے 22 برس بیت گئے
July 4, 2022 ویب ڈیسک

کراچی (92 نیوز) - سندھی لوک گلوکار الن فقیر کو مداحوں سے بچھڑے 22 برس بیت گئے ہیں، لیکن ان کے گائے کلام آج بھی ان کے چاہنے والوں کے کانوں میں رس گھولتے ہیں۔ 

فقیرانہ طبیعت، لطیفی راگ، صوفیانہ کلام اور پاپ میوزک کو نئی جہت دینے والے الن فقیر کے چاہنے والے اور پرستار ان کا پڑھا ہوا کلام نہیں بھول سکے ہیں۔

سورج غروب ہونے کے بعد جب حضرت شاہ لطیف کی درگاہ پر الن فقیر لطیفی راگ چھیڑتے توان کی آواز کا سو زایک پرکیف سماں باندھ دیتا۔

1932 میں جامشورو میں آنکھ کھولنے والے الن اپنے نام کی طرح فقیرانہ طبیعت کے مالک تھے۔ الن فقیر نے بیشتر کلام سندھی میں پڑھے لیکن اردو نغمے ان کی ملک گیر شہرت کا باعث بنے۔

الن فقیر نے صوفیانہ کلام اور پاپ میوزک کو ایک نئے روپ میں پیش کرکے نئی جہت کی بنیاد رکھی۔ الن فقیر نے قومی نغموں میں بھی خوب نام کمایا۔

انیس سو اسی میں صدارتی تمغہ حسن کارکردگی پانے والا یہ بے مثل فنکار 4 جولائی دو ہزار کو اس فانی دنیا سے کوچ کرگیا۔