Tuesday, December 6, 2022

شاہ زیب قتل کیس، مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی کراچی کی ملیر جیل سے رہا

شاہ زیب قتل کیس، مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی کراچی کی ملیر جیل سے رہا
November 24, 2022 ویب ڈیسک

کراچی (92 نیوز) - شاہ زیب قتل کیس کا مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی کراچی کی ملیر جیل سے رہا ہو گیا۔

شاہ رخ جتوئی اور دیگر ملزمان  10 سال بعد رہا ہوئے۔ مقتول کے ورثا نے ملزمان کو دعیت کےعوض معاف کر دیا تھا۔

سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے 18 اکتوبر  کو کیس میں شامل  تمام ملزمان کو بری کرنےکا حکم دیا تھا اور 2 روز پہلے  کیس  کا  تفصیلی فیصلہ جاری کیا  تھا ۔

پچیس دسمبر 2012 کو مقتول شاہ زیب خان کی بہن کے ساتھ شاہ رخ جتوئی اور اور اس کے دوست غلام مرتضیٰ لاشاری  نے بدسلوکی کی تھی  جس پر  شاہ زیب  نے مشتعل ہو کر ملزمان سے جھگڑا کیا  تھا۔ اس  دوران شاہ رخ جتوئی نے دوستوں کے ساتھ شاہ زیب کی گاڑی پر فائرنگ کر کے اسے قتل کر دیا تھا۔

واقعے کے بعد ملزم شاہ رخ  بیرون ملک فرار ہوگیا تھا جسے آخر کار گرفتار کرکے  مقدمہ انسداد دہشت گردی عدالت میں چلا یا گیا تھا ۔

سات جون دو ہزار تیرہ کو قتل کا جرم ثابت ہونے پر شاہ رخ جتوئی اور سراج تالپور کو سزائے موت جبکہ سجاد تالپور اور غلام مرتضیٰ لاشاری کو عمر قید کی سزا سنائی گئی تھی  تاہم سندھ ہائی کورٹ نے ٹرائل کورٹ کا فیصلہ تبدیل کرکے شاہ رخ جتوئی کو  عمر قید سنائی کی سزا  سنائی تھی جس کے بعد ملزمان نے سزا کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیلیں دائر کی تھی۔