Sunday, October 2, 2022

سلمیٰ ہائیک نے ٹرمپ پر جنسی طور پر ہراساں کرنے کا الزام لگا دیا

سلمیٰ ہائیک نے ٹرمپ پر جنسی طور پر ہراساں کرنے کا الزام لگا دیا
نیویارک (ویب ڈیسک) امریکی صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کی رنگین مزاجی کے قصے تھمنے کا نام ہی نہیں لے رہے۔ اس بار ہالی وڈ اداکارہ سلمیٰ ہائیک ٹرمپ کے خلاف میدان میں آ گئیں۔ کہتی ہیں ٹرمپ نے دوستی کرنے کا کہا‘ انکار کیا تو برا مان گئے اور ان کے خلاف اخبار میں خبر چھپوا دی۔ تفصیلات کے مطابق ہالی وڈ اداکارہ سلمیٰ ہائیک ری پبلکن پارٹی کے صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ پر جنسی طور پر ہراساں کرنے والی گیارہویں خاتون بن گئیں۔ اداکارہ نے کہا کیریئر کے ابتدا میں وہ اپنے ایک دوست کے ساتھ ڈونلڈ ٹرمپ سے ملیں۔ ٹرمپ نے دوست سے ان کے گھر کا فون نمبر لیا اور پھر کالز کا سلسلہ شروع کر دیا۔ ٹرمپ کہتے تھے دوستی کرلو اور باہر کہیں ملو۔ انکار پر ٹرمپ نے یہ خبرچھپوائی کہ وہ سلمیٰ ہائیک سے دوستی اس لیے نہیں کرنا چاہتے کیونکہ اداکارہ کا قد چھوٹا ہے۔ سلمیٰ ہائیک کا کہنا تھا کہ خبر چھپوانے کے بعد ٹرمپ نے صفائیاں بھی پیش کیں۔ کہا کوئی ایسا کیسے کہہ سکتا ہے۔ حد ہو گئی‘ دو ہزار آٹھ میں ٹرمپ فاونڈیشن نے ایک پرتعیش تفریحی دورے پر ایک لاکھ بیس ہزار ڈالر خرچ کیے۔ چیریٹی فنڈ کی مد میں سلمیٰ ہائیک کے لیے ایک عشائیے کا بھی اہتمام کیا گیا۔ امریکی ٹیکس ریکارڈز کے مطابق ٹرمپ فاونڈیشن کے ذریعے عطیات دیے گئے لیکن ٹرمپ نے خود ٹیکس ادا نہیں کیا۔ واضح رہے کہ امریکی صدارتی انتخابات میں صرف سترہ دن باقی رہ گئے ہیں۔ ہلری کے مقابلے میں ٹرمپ کی ریٹنگ میں بہتری آنا شروع ہو گئی ہے۔ تازہ سروے میں ہلری کی برتری سات پوائنٹس سے کم ہو کر چار پوائنٹس رہ گئی۔