Friday, September 30, 2022

پشاور : پولیس نے تہرے قتل میں ملوث دو ملزمان گرفتارکرلئے

پشاور : پولیس نے تہرے قتل میں ملوث دو ملزمان گرفتارکرلئے
پشاور(92نیوز)پشاور کے علاقہ تہکال میں ایک ہفتہ قبل تین خواتین کے قتل اورنعشیں جلائے جانے کے واقعے کی گتھی سلجھ گئی ماں بیٹیوں کو پھانسی دے کر قتل کیا گیااورلاشوں پر تیل چھڑک کر آگ لگائی گئی۔ قاتل کوئی اور نہیں مقتولہ کا افغانی شوہراور دو بیٹیوں کا والد نکلا ملزم کے بھائیوں اورایک خاتون سمیت چار افراد نے واردات میں اس کی معاونت کی۔ تفصیلات کےمطابق سی سی پی او پشاور طاہر خان نے بتایا ہے کہ  17 اکتوبرکو تہکال سے تین لاشیں برآمد ہوئی تھی جو شناخت کے قابل نہیں تھیں ۔ پولیس نے تفتیش کی تو معلوم ہوا کہ تینوں لاشیں حسن بانو اور اس کی دو بیٹیوں شیرینہ اور عائشہ کی ہیں تینوں خواتین کو گلے میں پھندا ڈال کرقتل کیا گیا اور بعد میں لاشوں پر تیل چھڑک کر آگ لگا دی گئی حسن بانو کے شوہرغلام محمد نے اپنے بھائیوں اور خاندان کے دوسرے افراد کے ساتھ ملکر ماں اوربیٹیوں کو قتل کیا۔ پولیس کے مطابق قاتل غلام محمد افغان باشندہ ہےجو واردات سے چند روز پہلےبیوی اوردونوں بیٹیوں کوافغانستان لے گیا تھاخواتین کے قتل کی وجہ حسن بانو کا منشیات کے دھندے میں ملوث ہونااورافغانستان سے بھاگ کرواپس پاکستان آنا بتائی جارہی ہے۔ پشاور پولیس نے غلام محمد کے دو بھائیوں پیرمحمد اورعزیز اللہ کو گرفتارکرکے واردات میں استعمال ہونے والی گاڑی بھی برآمد کرلی ہےجبکہ دیگرملزمان افغانستان فرارہوچکے ہیں۔