Tuesday, July 23, 2024

پاک فوج کا کامیاب آپریشن، بٹگرام کیبل کار میں پھنسے تمام 8 افراد کو بچا لیا

پاک فوج کا کامیاب آپریشن، بٹگرام کیبل کار میں پھنسے تمام 8 افراد کو بچا لیا
August 22, 2023 ویب ڈیسک

بٹگرام (92 نیوز) - پاک فوج نے ضلع بٹگرام کے پہاڑی علاقے میں انتہائی پیچیدہ اور مشکل آپریشن کرتے ہوئے کیبل کار میں پھنسے تمام 8 افراد کو منگل کے روز علاقے کی سول انتظامیہ اور مقامی لوگوں کی بھرپور شرکت سے کامیابی سے بچا لیا۔

انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) کے مطابق، جنرل آفیسر کمانڈنگ سپیشل سروسز گروپ (جی او سی، ایس ایس جی) نے آپریشن کی قیادت کی جس میں ایس ایس جی کے دستوں کی سلینگ ٹیم نے 600 فٹ کی بلندی پر چیئر لفٹ میں پھنسے افراد کو بحفاظت نکال لیا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ چیئر لفٹ میں پھنسے تمام افراد کو بحفاظت نکال کر محفوظ مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے۔

آرمی چیف عاصم منیر کی خصوصی ہدایات پر آرمی ایوی ایشن اور ایس ایس جی کی ماہر ٹیم نے ریسکیو آپریشن تیزی سے شروع کر دیا۔ بعد ازاں ایس ایس جی کی سلنگ ٹیم اور پاک فضائیہ کا ہیلی کاپٹر بھی آپریشن کا حصہ بن گیا۔

آرمی ایوی ایشن نے سلنگ ٹیم کو مکمل تکنیکی مدد فراہم کی جس کی وجہ سے آپریشن ممکن ہوا۔ پاکستان آرمی اور پاکستان ایئر فورس کے پائلٹس نے بھی بے مثال مہارت اور کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

ریسکیو آپریشن کو کامیابی سے مکمل کرنے کے لیے ایک مقامی کیبل ایکسپرٹ بھی مصروف عمل تھا جبکہ سول انتظامیہ اور مقامی لوگوں نے بھی اس آپریشن میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا جو کہ ایک انتہائی مشکل اور کرب ناک آپریشن تھا۔

پاک فوج اور پاک فضائیہ کے ہیلی کاپٹرز نے بروقت موقع پر پہنچ کر ریسکیو آپریشن شروع کیا۔ پاک فوج کے سپیشل سروسز گروپ کی سلنگ ٹیم نے پاک فضائیہ، مقامی انتظامیہ اور کیبل ماہرین کی مدد سے پاکستان کی تاریخ کا یہ منفرد آپریشن کر کے اپنی مہارت کا لوہا منوایا۔

پاک فوج نے ہمیشہ ہر مشکل وقت میں عوام کی آواز پر لبیک کہا ہے اور مشکل کی ہر گھڑی میں عوام کے ساتھ کھڑی ہے اور رہے گی۔ انشاء اللہ، "آئی ایس پی آر نے کہا۔

اطلاعات کے مطابق یہ واقعہ ضلع بٹگرام کی تحصیل الائی میں پیش آیا۔ کیبل کار کا کیبل جس میں سات اسکولی بچوں اور ایک ٹیچر کو لے کر صبح کے وقت کھائی کے دوسری طرف اپنے اسکول جا رہے تھے وہ درمیانی ہوا میں پھنس گئے۔

پھنسے افراد کی شناخت ابرار، عرفان، اسامہ، رضوان اللہ، عطاء اللہ، نیاز محمد، شیر نواز اور گل فراز کے نام سے ہوئی ہے، جو مبینہ طور پر بٹنگی گورنمنٹ ہائی سکول جا رہے تھے۔

اس دوران قریبی مراکز صحت میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی جبکہ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال (ڈی ایچ کیو) بٹگرام کے ڈاکٹروں کو ہائی الرٹ کر دیا گیا۔