Friday, July 19, 2024

ملک میں گرمی کے ساتھ بجلی کی لوڈشیڈنگ، شہری سحر و افطار بغیر بجلی کے کرنے پر مجبور

ملک میں گرمی کے ساتھ بجلی کی لوڈشیڈنگ، شہری سحر و افطار بغیر بجلی کے کرنے پر مجبور
April 28, 2022 ویب ڈیسک

اسلام آباد (92 نیوز) - ملک میں سخت گرمی کے ساتھ بجلی کی لوڈشیڈنگ عروج پر ہے۔ شہری سحر و افطار بھی بغیر بجلی کے کرنے پر مجبور ہیں۔

ملک بھر میں بجلی کی لوشیڈنگ جاری ہے۔ اسلام آباد سمیت دیگر شہروں میں 10 سے بارہ گھنٹے جبکہ دیہی علاقوں میں 18 گھنٹے تک بجلی کی بندش کی جارہی  ہے۔ عوام بجلی کی  لوڈشیڈنگ سے تنگ آ گئے۔ سخت اذیت اور پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

پاور ڈویژن کے مطابق  بجلی کا شارٹ فال ساڑھے آٹھ ہزار میگا واٹ تک پہنچ گیا۔ ملک میں اس وقت بجلی کی طلب 27 ہزار 200 میگاواٹ جبکہ پیدوار صرف 18 ہزار 700 میگاواٹ  ہے۔ بڑے بجلی گھروں کو ایندھن کی فراہمی نہ ہونے سے بجلی کی پیدوار شدید متاثر ہو رہی ہے۔ حکومت کی جانب سے  بار بار  بجلی گھروں کو فرنس آئل اور ایل این جی کی فراہمی کو یقینی بنانے کے دعووں کے باجود تاحال  ایندھن کی سپلائی نہیں ہو سکی ہے۔ ملک میں پن بجلی ذرائع سے 3 ہزار 800 میگاواٹ، نجی شعبے کے بجلی گھروں سے 14 ہزارمیگاواٹ جبکہ سرکاری تھرمل پاورپلانٹس سے صرف 900 میگاواٹ بجلی پیدا ہورہی ہے۔

ملک کے بڑے ڈیمز  میں پانی کا ذخیرہ بھی ختم ہو رہا ہے۔ پاور ڈویژن کے مطابق تربیلا ڈیم گزشتہ 2 ماہ سے خالی ہے جبکہ منگلا ڈیم میں بھی پانی کا ذخیرہ  نہ ہونے کے برابر ہے۔ آئندہ چند روز میں توانائی بحران مزید سنگین ہونے کا خدشہ ہے۔