Thursday, September 29, 2022

کراچی : سوک سنٹر سے کود کر خودکشی کرنیوالے ریٹائرڈ ملازم کی موت معمہ بن گئی

کراچی : سوک سنٹر سے کود کر خودکشی کرنیوالے ریٹائرڈ ملازم کی موت معمہ بن گئی
کراچی (92نیوز) کراچی میں سوک سینٹر میں خودکشی کا معاملہ نیارخ اختیار کر گیا۔ کے ایم سی حکام کا کہنا ہے متوفی محمد اقبال پنشن کے لیے نہیں بجلی کا بل ٹھیک کرانے سوک سینٹر آیا تھا۔ تفصیلات کے مطابق سوک سینٹر کراچی کی چوتھی منزل سے گر کر کے ایم سی کے ریٹائرڈ ملازم محمد اقبال کی ہلاکت کا معاملہ کے ایم سی حکام کے گلے پڑنے لگا۔ فوری ہوئی تحقیقات تو ڈپٹی میئر ارشد وہرہ کے ایم سی کے گلے سے پھندا نکالنے کے لیے میدان میں آگئے۔ 92 نیوز سے بات چیت کرتے ہوئے ارشد وہرہ کا کہنا تھا کہ محمد اقبال نے پنشن کی عدم ادائیگی پر خود کشی نہیں کی۔ ارشد وہرہ کی ہدایت پر ڈائریکٹر فنانس کے ایم سی نے تیزی دکھائی اور محمد اقبال کی موت کو کے الیکٹرک کے کھاتے میں ڈال دیا۔ ڈائریکٹر فنانس ریحان خان کا کہنا تھا کہ اقبال کے پنشن کے تمام واجبات کلیئر ہیں۔ مرنے والا فنانس ڈیپارٹمنٹ میں کسی سے نہیں ملا۔ ریحان خان کا کہنا تھا کہ بنک ریکارڈ چیک کرنے پر یہ بھی معلوم ہوا کہ اس نے اپنے اکاو¿نٹ سے نو ہزار روپے نکلوائے تھے۔ ریحان خان کے مطابق متوفی سوک سینٹر بجلی کا بل ٹھیک کرانے آیا تھا۔ ادھر ترجمان کے الیکٹرک کا کہنا ہے سوک سینٹر میں خودکشی کرنے والے محمد اقبال کے بجلی کے بل کا کوئی مسئلہ نہیں تھا۔ ترجمان کا کہنا ہے کہ ہم نے چیک کیا ہے۔ محمد اقبال نے بجلی کے بل کے لیے کے الیکٹر ک سے کوئی رابطہ نہیں کیا۔