Sunday, December 4, 2022

اپوزیشن  لیڈر اگر کہیں نہیں جاسکتا تو لیڈر آف ہاؤس بھی نہیں جاسکتا : خورشید شاہ

اپوزیشن  لیڈر اگر کہیں نہیں جاسکتا تو لیڈر آف ہاؤس بھی نہیں جاسکتا : خورشید شاہ
لاہور(92نیوز)پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنما خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ اگر لیڈر آف اپوزیشن کہیں نہیں جا سکتا تو پھر لیڈر آف ہاؤس بھی کہیں نہیں جا سکتا ملکی زراعت تباہی کے دھانے پر پہنچ چکی لیکن حکومت کو اس کی کوئی فکر نہیں ۔ تفصیلات کےمطابق  پپلزپارٹی پنجاب ہاؤس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے کہا کہ کسانوں کو سترہ فیصد مارک اپ پر قرضہ ملتا ہے جبکہ شریف فیملی کو چھے فیصد مارک اپ پر قرض مل رہا ہے لاہور کی سڑکوں کو کینٹینر لگا کر بند کرنے پر ان کا کہنا تھا کہ اگر لیڈر آف اپوزیشن کہیں نہیں جا سکتا تو پھر لیڈر آف ہاؤس بھی کہیں نہیں جا سکے گا۔ خورشید شاہ نے کہا کہ دوہزار تیرہ میں عوام نے جو فیصلہ کیا تھا  وہ ٹھیک تھا یا غلط عوام کو احساس ہو گیا کسانوں کے دھرنے میں پہنچ کر خورشید شاہ کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وزیراعظم کسانوں کی بجائے مودی سے لڑیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے کبھی بھی کسانوں کے مسائل پر توجہ نہیں دی ۔ اس موقع پر کسانون کے دھرنے میں خورشید شاہ،قمرزمان کائرہ اور منظور وٹو نے بھی شرکت کی ۔