Sunday, September 25, 2022

صدر بن گیا تو غیرقانونی امیگریشن ایکٹ ختم کر دوں گا : ٹرمپ

صدر بن گیا تو غیرقانونی امیگریشن ایکٹ ختم کر دوں گا : ٹرمپ
نیویارک (ویب ڈیسک) خواتین کے الزامات امریکی صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کا پیچھا نہیں چھوڑ رہے لیکن ٹرمپ نے صدر بننے کی صورت میں پہلے سو روز کا پلان جاری کر دیا ہے۔ الزامات لگانے والی تمام خواتین ہٹ لسٹ پر۔ کہتے ہیں سب سے پہلے ان کے خلاف مقدمہ کروں گا۔ ٹرمپ نے غیرقانونی امیگریشن ایکٹ ختم کرنے کی دھمکی بھی دے دی۔ تفصیلات کے مطابق ری پبلکن امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ نے بتا دیا اگر وہ امریکہ کے صدر بن گئے تو پہلے سو روز میں کیا کریں گے۔ ٹرمپ نے پنسلوینیا، ورجینیا اور اوہائیو میں ریلیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا ان پر الزام لگانے والی تمام خواتین جھوٹی ہیں۔ بس الیکشن ختم ہوجائیں‘ ان تمام جھوٹوں کے خلاف ہرجانے کا مقدمہ کروں گا۔ ٹرمپ نے میڈیا پر بھی خوب تنقید کے نشتر چلائے اور کہا کرپٹ میڈیا من گھڑت کہانیوں کے ذریعے ان کی کردار کشی کر رہا ہے۔ ملک سے سٹیٹس کو کا خاتمہ کر دیا جائے گا۔ ٹرمپ کہتے ہیں ہلری کلنٹن کا مقابلہ ان سے نہیں۔ وہ تبدیلی‘ امریکی عوام اور ووٹرز کے خلاف الیکشن لڑ رہی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ غیرقانونی امیگریشن ایکٹ ختم ہونے کے بعد امریکہ بدر کیے جانے والوں کی غیرقانونی طورپر واپسی پر انہیں سزا دی جائے گی۔ امریکہ بدر کیے جانے والے شہریوں کو واپس لینے سے انکار کرنے والے ممالک کے باشندوں کو امریکی ویزا جاری نہیں کیا جائے گیا۔ فوج، پبلک سیفٹی اور ہیلتھ کے علاوہ وفاقی ملازمین کی بھرتیوں پرپابندی لگادی جائے گی۔ دونوں ایوانوں کی مدت سے متعلق بھی قانون سازی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ میکسیکو کی سرحد پر دیوار تعمیر کریں گے جس کے اخراجات بھی میکسیکو ہی ادا کر ے گا۔ انہوںنے الزام عائد کیا کہ اٹھارہ لاکھ مردہ لوگوں کے ووٹ رجسٹرڈ کیے گئے ہیں جن میں سے کچھ ووٹ بھی ڈال رہے ہیں۔ ادھر چونتیس ریاستوں میں ارلی ووٹنگ کا سلسلہ جاری ہے اور اب تک چوالیس لاکھ افراد ووٹ کاسٹ کر چکے ہیں۔ اونٹ کس کروٹ بیٹھے گا اس کا فیصلہ آٹھ نومبر کو ہوجائے گا۔