Tuesday, August 16, 2022

دیوار سے لگایا گیا تو بولنے پر مجبور ہو جاؤں گا، عمران خان

دیوار سے لگایا گیا تو بولنے پر مجبور ہو جاؤں گا، عمران خان
July 5, 2022 ویب ڈیسک

اسلام آباد (92 نیوز) - چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا کہنا ہے دیوار سے لگایا گیا تو بولنے پر مجبور ہو جاؤں گا۔

عمران خان نے نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہا مجھے معلوم ہے کس نے غداری کی ہے ۔ اگر ہمیں اسی طرح دیوار سے لگایا گیا تو میں بولنے پر مجبور ہو جاؤں گا ۔ سب کچھ قوم کے سامنے رکھوں گا۔ ابھی تک خاموش ہیں کیونکہ ملک کا نقصان نہیں چاہتے، ویڈیو بنا کر چھپا رکھی ہے۔ انہیں کچھ ہوا تو قوم کو غداروں کا پتہ چل جائے گا۔ عدلیہ سے پوچھتے ہیں کیا مارشل لا لگ چکا، کیا بنیادی انسانی حقوق معطل ہو گئے ہیں؟ پاکستان میں فاشزم آچکا، خوف پھیلایا جا رہا ہے۔ حکمران ان پر اور صحافیوں پر مقدمے بنا رہے ہیں۔

 عمران خان بولے پنجاب کی ساری انتظامیہ ن لیگ کو ضمنی انتخابات جتوانے کے لیے کوشاں ہے۔ میری اپنے ملک کے سارے اداروں اور قوم سے درخواست ہے کہ یہ فیصلہ کن وقت ہے، اگر کسی بھی وجہ سے خوف کے بت کے سامنے جھک گئے تو یہ چور ملک و قوم کے ساتھ وہ کریں گے جس کا تصور بھی نہیں کیا جا سکتا۔ ان دو خاندانوں کی وجہ سے پاکستان پیچھے چلا گیا اور بنگلہ دیش بھی اس سے آگے نکل گیا۔ آصف زرداری ایسے پھر رہا ہے جیسے پاکستان کا بادشاہ ہو۔ نواز شریف بھی واپس آنے کے لیے پر تول رہا ہے۔ مریم نواز وہ ہے جس نے ٹی وی چینل پر بیٹھ کر کہا تھا لندن تو دور میری تو پاکستان میں بھی کوئی جائیداد نہیں۔ پاناما میں انکشاف ہوا کہ لندن کے مہنگے ترین علاقے میں چار بڑے بڑے اپارٹمنٹس مریم نواز کے نام پر ہیں۔ اس کے بعد کیلبری فونٹ نکل آیا، یہ فونٹ 2007ء میں آیا لیکن انہوں نے 2006ء میں ہی کیلبری فونٹ کا استعمال کر دیا۔ ساری قوم سے کہتا ہوں ہمیں اب کھڑا ہونا پڑے گا۔ یہ ڈرا دھمکا کر ہم سے تسلیم کرانا چاہتے ہیں۔ سب سے پہلے 20 حلقوں میں ہونے والے ضمنی انتخابات میں ہم نے ان کو شکست دینی ہے۔ اس کے بعد ہمارا ایک ہی مطالبہ ہو گا کہ صاف شفاف عام انتخابات ہوں۔