Sunday, November 28, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

مریم نواز کی اسلام آباد ہائیکورٹ پیشی پر دھکم پیل ، عدالت کا برہمی کا اظہار

مریم نواز کی اسلام آباد ہائیکورٹ پیشی پر دھکم پیل ، عدالت کا برہمی کا اظہار
September 1, 2021 --- ویب ڈیسک

اسلام آباد (92 نیوز) ایون فیلڈ ریفرنس کی اپیلوں پر سماعت میں مریم نواز کی اسلام آباد ہائیکورٹ داخلے پر دھکم پیل دیکھنے میں آئی۔ جسٹس عامر فاروق کی جانب سے شدید برہمی کا اظہار کیا گیا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے دو رکنی بینچ نے ایون فیلڈ ریفرنس کی اپیلیوں پر سماعت کی ۔ مریم نواز اور وکیل امجد پرویز کی عدم دستیابی پر نیب پراسکیوٹر نے عدالت سے استدعا کی کہ مریم نواز اور کپٹن ریٹائرڈ صفدر کی ضمانت منسوخ کر دینی چاہیے۔

مریم نواز کی آمد پر کمرہ عدالت میں بدظمی پر جسٹس عامر فاروق نے شدید برہمی کا اظہار کیا اور ریمارکس دیئے کہ جس کو یہ نہیں پتہ کہ کورٹ میں کیا کنڈکٹ ہوتا ہے۔ عدالت نے مقررہ وقت اسی وجہ سے دیا کہ درخواست گزار پیش ہو۔ پہلے تو نہیں لیکن اب ضمانت منسوخ کر ہی دینی چاہیے ۔

جسٹس عامر فارق نے  عطا تارڑ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا  کہ آپکے موکل کو عدالتی احترام کا معلوم ہی نہیں۔ جس پر عطا تارڑ نے عدالت سے معافی کی استدعا کی اور کہا کہ مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی ضمانت خارج نہ کریں ۔

جسٹس عامر فاروق نے کہا کہ عدالت میں شور شرابا کرنے پر اب ضمانت خارج کرنا بنتا ہے۔ جس ملزم کو عدالت کے احترام کا خیال نہیں وہ ضمانت کا بھی حق دار نہیں۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر وکلاء کو دلائل دینے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت 8 ستمبر تک ملتوی  کر دی۔

مریم نواز نے  ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ حکومتی 3 سالہ کارکردگی تباہی اور بربادی کی داستان ہے۔ تمام جماعتوں کو حکومت کے خلاف متحد ہونا چاہیے ۔

نوازشریف کی واپسی کے سوال پر مریم نواز نے کہا کہ انتقام کارروائی کے سامنے پیش ہونا عقلمندی نہیں، جب ن لیگ سمجھےگی تب نوازشریف واپس آئیں گے۔