Wednesday, December 1, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

الیکشن کمیشن نے سندھ میں بلدیاتی انتخابات پر فیصلہ محفوظ کر لیا

الیکشن کمیشن نے سندھ میں بلدیاتی انتخابات پر فیصلہ محفوظ کر لیا
September 6, 2021 --- ویب ڈیسک

اسلام آباد (92 نیوز) الیکشن کمیشن نے سندھ میں بلدیاتی انتخابات پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔

سندھ میں بلدیاتی انتخابات کا معاملہ، چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سماعت کی۔ سپیشل سیکرٹری الیکشن کمیشن ظفر اقبال ملک نے دلائل میں کہا سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013 کے تحت بھی 120 دن کے اندر انتخابات کرانا ضروری ہے۔ سندھ حکومت کے اقدامات سے لگتا ہے کہ وہ اگلے اٹھارہ ماہ تک بلدیاتی انتخابات نہیں کرانا چاہتی۔

ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضی وہاب نے دلائل میں کہا سندھ حکومت کو بلدیاتی انتخابات کرانے میں کوئی مسئلہ نہیں، زبردستی بلدیاتی انتخابات کرائے جاتے ہیں تو عوام کی حق تلفی ہوگی، پارلیمنٹ میں ہمارا مقدمہ کمزور ہوگا۔۔ سپیکر قومی اسمبلی سی سی آئی کا معاملہ مشترکہ اجلاس کو نہ بھجوائیں تو آئین کی خلاف ورزی ہوگی۔

دوران سماعت چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ نے کہا کہ عام انتخابات میں پیپلز پارٹی نے مردم شماری پر انتخابات پر اعتراض نہیں کیا۔ کیا بلدیاتی اداروں کی سیاسی جماعتوں کی نظر میں اہمیت نہیں ہے؟ الیکشن کمیشن کے فیصلے کا اطلاق تمام صوبوں پر ہوگا۔ فیصلہ قومی مفاد میں کیا جائے گا۔

ڈی جی لاء الیکشن کمیشن نے استفسار کیا کہ پارلیمنٹ کی مدت اگر ختم ہوجائے تو کیا بلدیاتی حکومتوں کا قیام نہیں ہوگا۔ اس پر مرتضی وہاب بولے 2023 میں کیا ہوگا اس کی بنیاد پر ابھی فیصلہ نہیں کیا جاسکتا۔ ایڈیشنل اٹارنی جنرل کا کہنا تھا ہ سی سی آئی کے فیصلے کے بعد بلدیاتی انتخابات کے انعقاد میں کوئی رکاوٹ نہیں۔۔ الیکشن کمیشن نے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔

مرتضی وہاب نے ے الیکشن کمیشن کے باہر کی میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ الیکشن کمیشن وفاقی حکومت کو زیرالتوا کیس پر فیصلہ کرنے کی ہدایت کرے۔ ہم خوشی خوشی بلدیاتی الیکشن کرانے کو تیار ہیں۔

پی پی رہنماء نے کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی الیکشن کمیشن آئین اور قانونی تقاضے پورے کرنے چاہییں۔