Monday, February 26, 2024

گجرات : درجنوں طالبات سےزیادتی کےبعد ویڈٰیوز بنائےجانےکا انکشاف

گجرات : درجنوں طالبات سےزیادتی کےبعد ویڈٰیوز بنائےجانےکا انکشاف
April 8, 2017
گجرات (92نیوز)گجرات میں درجنوں طالبات کی زیادتی کے بعد ویڈیوز بنائے جانے کا انکشاف ہوا ہے تینوں ملزم بھائی ہیں اورکافی عرصہ سے یہ مکروہ  کام کر رہے تھے ، پولیس نے مقدمہ درج کرکے مرکزی ملزم کو گرفتار کرلیا جبکہ بااثر افراد کی جانب سے  کیس کو ختم کرنے کیلئے  پولیس پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے۔ تفصیلات کےمطابق گجرات میں درندہ صفت بھائیوں کا گھناؤنا کردارکمسن لڑکیوں سے زیادتی کرکے ویڈیو  بناتے رہے ۔ کنجاہ کے علاقے لنگے میں ملزم سہیل‘ سمیر اور نعمان  اپنے والد طارق رانجھا کے  سپر سٹور پر کام کرتے تھے تینوں  بھائی دکان پر آنے والی طالبات کی تصویریں بنا کر اسے ایڈیٹ کرتےاور پھر یہ قابل اعتراض تصویریں اور ویڈیو لڑکیوں کو دکھا کرانہیں ہوس کا نشانہ بناتے اور  بلیک میل کیا جاتا۔ گروہ کا انکشاف اس وقت ہوا جب نویں جماعت کی ایک  لڑکی  ایزی لوڈ کروانے دکان پر آئی تو ملزم سہیل نے اسے زیادتی کا نشانہ بنایا اور ویڈیو بنا کر متاثرہ خاندان سے دو لاکھ روپے مانگے۔ واقعے کا گھر والوں کو پتہ چلنے  پر لڑکی نے خودکشی کی کوشش کی جس کی  اسپتال میں حالت تشویشناک ہے معاملہ سامنے آنے پر پولیس نے کارروائی کی اور  ملزموں کے لیپ  ٹاپ  اور  یو ایس بیز  سے مختلف طالبات کی 117 ویڈیوز اور 700 سے زائد  تصویریں ملنے کا انکشاف ہوا کنجاہ پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کرکے مرکزی  ملزم سہیل کو گرفتار کر لیا  ادھر  تحریک انصاف نے گھناؤنے واقعے کے خلاف پنجاب اسمبلی سیکریٹریٹ میں تحریک التوا جمع کرادی اورتمام ملزموں کی فوری  گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔