Tuesday, December 6, 2022

کورونا لاک ڈاؤن سے روزی کمانے اور کھانے والوں کو اگلے وقت کی روٹی کی فکر

کورونا لاک ڈاؤن سے روزی کمانے اور کھانے والوں کو اگلے وقت کی روٹی کی فکر
کراچی (92 نیوز) کورونا وائرس سے بچاؤ کیلئے لاک ڈاؤن تو ہوگیا اور سب کورونا بھگانے کے لئے کوشاں بھی ہیں، مگر روزی کمانے اور کھانے والوں کو تو بس اگلے وقت کے کھانے کی فکر ہے۔ کرائے کا ایک کمرا کل ملا کر 18 افراد رہائش پذیر لیاقت آباد سی ون ایریا میں یہ عیدو نامی شخص کا گھرانہ ہے۔ عیدو پلاسٹک فیکٹری میں کام کرتا ہے جو لاک ڈاؤن کی وجہ سے بند ہے کہتا ہے امداد کے حکومتی دعوے کھوکھلے نکلے، بعض این جی اوز کے لوگ شناختی کارڈ لیکر گئے مگر راشن کا پتہ نہیں، عیدو کی والدہ بھی دکھ بھری زندگی پر لاک ڈائون لگنے سے پریشان ہیں۔ پڑوسی محمد بخش کے حالات بھی ایسے ہی ہیں جو ٹین ڈبے کام کرتا ہے کہتا ہے پھیری لگا کر کباڑ جمع کرلیا مگر اب اسے فروخت کرنے کے آثارنہیں۔ حکومت کی جانب سے راشن فراہمی کا تو بس سن رہے ہیں۔ لیاقت آباد کی اس آبادی میں بسنے والے تمام ہی گھرانوں کے ایک جیسے حالات ہیں اور یہ عکاسی ہے روز کمانے اور کھانے والوں کی۔