Monday, October 3, 2022

کرپشن اور جرائم: سندھ میں رہنے والے 10پولیس افسروں کیخلاف تحقیقات

کرپشن اور جرائم: سندھ میں رہنے والے 10پولیس افسروں کیخلاف تحقیقات

کراچی (92 نیوز) وفاقی حکومت  نے محکمہ پولیس سندھ میں کرپشن ،غبن اورجرائم میں ملوث ہونے کے الزامات پرسابق آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی سمیت دس پولیس افسران کے خلاف تحقیقات کا حکم دے دیا۔ چیف سیکریٹری سندھ نے سپریم کورٹ کو پیش رفت سے آگاہ کردیا۔

سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں دورکنی بینچ کے روبرو چیف سیکریٹری سندھ رضوان میمن نے پیش رفت رپورٹ پیش کی۔ رپورٹ کے مطابق سندھ  میں تعینات رہنے والے دس اعلی پولیس افسران کے خلاف تحقیقات شروع  کردی گئی۔

رپورٹ کے مطابق سابق آئی جی سندھ غلام حیدرجمالی،سابق ڈی آئی جی ٹریننگ شہاب مظہر بھلی،سابق ایڈیشنل آئی جی سندھ اعتزاز احسن گورا یہ،سابق ایس پی غلام نبی کیریو، سابق ایڈیشنل آئی جی فنانس سید فدا حسین شاہ،ایس پی سید سلمان حسین ،ایس ایس پی کیپٹن ریٹائرڈ غلام اظفرمہیسر،سابق ایس پی امجد احمد شیخ،سابق  ایس پی خالد مصطفی کورائی اور پی ایس پی افسر عمر طفیل کے خلاف بھی انکوائری تشکیل  کردی گئی۔

سروسز اینڈ جنرل اینڈ منسٹریشن ڈپارٹمنٹ ، ایف آئی اے سمیت دیگر اداروں کے  اعلی افسران انکوائری آفیسر مقرر کئے گئے ہیں ڈی جی ایف آئی اے محمد املش کو غلام حیدر جمالی اور شہاب مظہر بھلی کے خلاف انکوائری آفیسر مقرر کردیا گیا۔

ان پولیس افسران کے خلاف پولیس میں غیرقانونی بھرتیوں کیلئے انکوائریز کی جائیں گی۔پولیس افسران کے خلاف پولیس فنڈز میں خرد برد اور کرپشن کی بھی تحقیقات بھی کی جائیں گی۔