Wednesday, October 5, 2022

کراچی کے نشتر پارک میں حملے کو 11 برس بیت گئے

کراچی کے نشتر پارک میں حملے کو 11 برس بیت گئے

کراچی (92 نیوز) درود و سلام اور جشن آمد رسول کی صدائیں بلند کرتے عاشقان مصطفیؐ پر نشتر پارک کراچی میں حملے کو گیارہ برس بیت گئے۔
اس دوران اقتدار کے ایوانوں میں چہرے بدل گئے، انتظامی فیصلے اور لوگ بدل گئے، مگر سانحہ نشتر پارک میں شہادتوں کے سفر پر جانیوالوں کے قاتل بے نقاب نہیں ہوئے۔
عدالتوں میں کیس چلے، پولیس کے ہر ہی شعبے نے کبھی ایک تو کبھی دوسرے کالعدم گروپ کے لوگ پکڑے۔ انتظامی نا اہلی اور سیاسی ہاتھ بھی تحقیقاتی رپورٹس میں بتلائے مگر شہدائے میلاد کے قاتل سامنے نہیں آئے۔
قومی ایکشن پلان آیا تو فوجی عدالتوں میں کیسز چلنے لگے۔ پہلے غور پھر اعلان ہوا کہ سانحہ نشتر پارک کا کیس فوجی عدالتوں کو جائے گا مگر سندھ حکومت یہ بھی نہ کر سکی۔
شہدائے میلاد و سانحہ نشتر پارک کے لواحقین ریاست اور حکمرانوں سے سوال کرتے ہیں کہ منصوبہ ساز اور قاتل کب بے نقاب ہوں گے۔