Tuesday, October 4, 2022

کراچی ، پولیس افسر کا لڑکوں پر تشددکا معاملہ ، آئی جی کو رپورٹ ارسال

کراچی ، پولیس افسر کا لڑکوں پر تشددکا معاملہ ، آئی جی کو رپورٹ ارسال

کراچی ( 92 نیوز ) کراچی کے علاقے فیروز آباد میں تین لڑکوں پر پولیس افسر کے تشدد کا معاملے پر پولیس نے آئی جی کو رپورٹ ارسال کر دی ۔
واقعات کے مطابق لڑکیوں سے چھیڑخانی کے اطلاع ملنے پر تھانہ فیروز آباد پولیس نے تینوں نوجوانوں کو حراست میں لے کر تھانے منتقل کیا اور بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا ۔
ڈی ایس پی یعقوب جٹ نے لڑکوں پر تشدد کا اعتراف کیا اور منطق پیش کی کہ لڑکیوں سے چھیڑ خانی کرنے والوں پر تشدد جائز ہے۔
اہلخانہ اور دوستوں کو اطلاع ملی تو وہ تھانے پہنچ گئے اورپولیس کےروئے اور تشدد کے خلاف احتجاج کیا۔
میڈیاپرخبرنشرہونے کےبعد ایس پی جمشید واقعے کی ابتدائی رپورٹ اعلی حکام کوارسال کردی ۔
آئی جی سندھ نے نوٹس لیتے ہوئے ڈی آئی جی ایسٹ کو واقعہ کی تحقیقات کاحکم دے دیا۔ انہوں نے کہا کہ اگراختیارات سے تجاوز ثابت ہوتو افسرکے خلاف کارروائی کی جائے ۔ متاثرین کے احتجاج پر ڈی ایس پی کو معطل کردیا گیا ہے ۔
ادھر متاثرین نے الزام عائد کیا کہ لڑکوں کا ڈی ایس پی کے دوست کے بیٹے سے جھگڑا ہوا تھا جس پر ڈی ایس پی اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے لڑکوں کو برہنہ کر کے بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا ہے ۔