Saturday, October 1, 2022

کراچی میں بلدیاتی اختیارات کیلئے پی ٹی آئی اور اسد عمر کا سپریم کورٹ سے رجوع

کراچی میں بلدیاتی اختیارات کیلئے پی ٹی آئی اور اسد عمر کا سپریم کورٹ سے رجوع
کراچی ( 92 نیوز) کراچی میں بلدیاتی اختیارات کیلئے سپریم کورٹ میں پی ٹی آئی اور اسد عمر نے درخواست دائر کر دی ، سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013 کے سیکشن 74 اور 75 کو کالعدم قرار دینے کی استدعا  کی ۔ پی ٹی آئی کی  جانب سے  سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے سیکشن 18 کو بھی کالعدم قرار دینے کی استدعا  کی گئی ،  سندھ حکومت کو کے ایم سی کے تمام واجبات فوری ادا کرنے کا حکم دیا جائے۔ عدالت عظمیٰ سے استدعا کی گئی  کہ  عبوری بلدیاتی نمائندوں کو آرٹیکل 140اے کے تحت مکمل اختیارات فراہم کرنے کا حکم دے، سندھ حکومت کو ضلع ٹیکس سود سمیت کے ایم سی کو دینے کا حکم دیا جائے اور   کراچی میں پانی اور سیوریج کا نظام مقامی حکومت کے حوالے کیا جائے۔ درخواست میں کہا گیا کہ  بلدیاتی قانون کی دفعات 74 اور 75 صوبائی حکومت کو بے پناہ طاقت دیتی ہیں،  بلدیاتی قانون کی دفعہ 74 اور 75 آئین کے آرٹیکل 140 اے سے متصادم ہیں،  پی ٹی آئی نے پنجاب اور کے پی میں بلدیاتی اداروں کو بااختیار بنایا۔