Tuesday, December 7, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

کراچی: ایم کیو ایم کے قائد کی اشتعال انگیز تقاریر سے متعلق کیس کی سماعت، خواجہ اظہار الحسن کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور

کراچی: ایم کیو ایم کے قائد کی اشتعال انگیز تقاریر سے متعلق کیس کی سماعت، خواجہ اظہار الحسن کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور
March 26, 2016
کراچی (نائنٹی ٹو نیوز) انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ایم کیو ایم کے قائد سمیت 20 رہنماؤں کو اشتہاری قرار دے دیا جبکہ پولیس کی جانب سے مفرور قرار دیئے گئے ایم کیو ایم کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستار، خالد مقبول صدیقی سمیت دیگر کے ایک بار پھر ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے گئے ہیں۔ انسداد دہشت گردی کی عدالت میں ایم کیو ایم کے قائد کی اشتعال انگیز تقاریر سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی تو ایم کیو ایم کے رہنما وسیم اختر، رؤف صدیقی اور قمر منصور عدالت میں پیش ہوئے جبکہ سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خواجہ اظہار الحسن کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ خواجہ اظہارالحسن ویزے کی تجدید کے لیے دبئی میں ہیں، پیش نہیں ہو سکتے جس پر عدالت نے خواجہ اظہار الحسن کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کر لی۔ عدالت نے ایم کیو ایم کے قائد کی اشتعال انگیز تقریر کے 21 مقدمات میں ایم کیو ایم کے قائد سمیت 20 رہنماؤں کو اشتہاری قرار دے دیا۔ رہنماؤں میں ڈاکٹر فاروق ستار، خالد مقبول صدیقی، رشید گوڈیل، ریحان ہاشمی اور خواتین رہنما بھی شامل ہیں۔ عدالت میں مختار کار نے متحدہ رہنماؤں کے جائیداد کی تفصیلات بھی پیش کیں۔ عدالت نے پولیس کی جانب سے مفرور قرار دیئے گئے ایم کیو ایم کے رہنما فاروق ستار، خالد مقبول صدیقی سمیت دیگر کے ایک بار پھر ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے۔