Monday, September 26, 2022

کراچی آپریشن کا ہدف امن کی بحالی، جس پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا  : نوازشریف

کراچی آپریشن کا ہدف امن کی بحالی، جس پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا  : نوازشریف
کراچی(92نیوز)وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ  کراچی  آپریشن کا ہدف امن  کی  بحالی ہے  جس پر کوئی سمجھوتہ  نہیں  ہو  گا  وزیراعلیٰ سندھ  سے کہا کہ معاملات کو قانونی پیچیدگیوں میں الجھایاجا رہا ہے اس کا  حل نکالیں ورنہ چھے سے آٹھ گھنٹے میں خود فیصلہ کر لیں گے۔ آرمی  چیف جنرل راحیل شریف  نے کہا کہ کراچی  آپریشن  سے شہر میں امن و امان کی  صورتحا ل میں  نمایاں  بہتری  آئی ہے۔ تفصیلات کےمطابق گورنر ہاؤس کراچی میں  وزیراعظم نوازشریف کی  صدارت  میں اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا گورنر سندھ ڈاکٹرعشرت العباد، وزیراعلی سید قائم علی شاہ، وزیردفاع خواجہ آصف وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان، آرمی چیف جنرل راحیل شریف، ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل رضوان اختر، کورکمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار  اجلاس میں شریک   ہوئے وزیراعظم نوازشریف  کو  کراچی  آپریشن اور  امن و امان کی  صورتحال   سے متعلق بریفنگ دی گئی ۔ آئی جی سندھ نے  شرکا  اجلاس کو  بتایا کہ ملٹری پولیس پر حملے کے ملزموں کو گرفتار کر لیا گیا  ہے وزیراعظم  نوازشریف  کا  اس موقع  پر کہنا تھا کہ  کراچی آپریشن کا ہدف امن کی بحالی ہے ، حکومت  اس  پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی شہر  میں  ڈھائی سال   پہلے جیسے حالات  نہیں رہے رینجرزآپریشن  کے باعث شہر میں ٹارگٹ کلنگ ،اغوا  برائے   تاوان ، بھتہ  خوری  اور  اسٹریٹ  کرائم میں  خاصی  کمی   آ ئی ہے کراچی  سے بیرون  ملک جانے  والے  سرمایہ کاروں نے  دوبارہ  شہر کا رخ  کرلیا  ہے۔ حکومت   شہر قائد کو  ایک  بار پھر  روشنیوں کا شہر  بنانے کے لئے   پر عزم  ہے  ا ور  آخری   دہشت  گرد کے  خاتمے  تک جرائم  پیشہ افراداور  قانون  شکن عناصر کے  خلاف آپریشن  جاری رہے  گا  وزیراعظم نے کراچی میں امن قائم  کرنے  پر  رینجرز ، پولیس اور   انٹیلی  جنس  اداروں کے کردار کو   سراہا اس سے  پہلے  آرمی   چیف جنرل  راحیل شریف   نے  کور کمانڈر کراچی  لیفٹینٹ   جنرل  نوید مختار سے ملاقات کی   جس  کے   بعد   آرمی  چیف نے  شہر کے مختلف  علاقوں کا دورہ  کیا  اور امن و امان کی  صورتحال کا   جائزہ لیا۔