Saturday, October 1, 2022

کامیڈی کنگ امان اللہ آسودہ خاک، نماز جنازہ میں گورنر پنجاب سمیت فنکاروں و مداحوں کی شرکت

کامیڈی کنگ امان اللہ آسودہ خاک، نماز جنازہ میں گورنر پنجاب سمیت فنکاروں و مداحوں کی شرکت
لاہور (92 نیوز) کامیڈی کنگ امان اللہ کو سپرد خاک کردیا گیا، نماز جنازہ میں گورنر پنجاب ، صوبائی وزیر اطلاعات سمیت فنکاروں اور مداحوں کی بڑی تعداد شریک ہوئی، امان اللہ کافی عرصہ سے علیل تھے، امان اللہ نے پاکستانی تھیٹر کو نئی جہت سے روشناس کرایا، چار دہائیوں تک لوگوں کے چہروں پر ہنسی بکھیرتے رہے۔ اداکار نعمان اعجاز، کاشف نثار، ڈائریکٹر سہیل ٹونی، آصف اقبال، عمران شوکی، ہنی البیلا، احد علی شیخ، عزیز جہانگیری امان اللہ کی رہائشگاہ پہنچے۔ امان اللہ کی میت گھر سے اٹھائی گئی، وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے اپنی نگرانی میں کامیڈین امان اللہ کی قبر تیار کروائی اور احکامات جاری کئے۔ امان اللہ لاہور کے نجی اسپتال میں زیر علاج تھے۔ انکی عمر 70 سال تھی۔ معروف کامیڈین و اداکار امان اللہ کی طبیعت بِگڑ گئی تھی جس پر انہیں مقامی نجی ہسپتال میں داخل کرا دیا گیا تھا۔ گزشتہ ماہ بھی امان اللہ خان کو طبیعت خراب ہونے پر مقامی ہسپتال منتقل کیا گیا تھا جہاں کئی روز زیرعلاج رہنے کے بعد انہیں ڈسچارج کیا گیا تھا۔ اہلخانہ کے مطابق امان اللہ کو پھیپھڑوں اور سانس میں تکلیف کے باعث ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا جہاں انہیں ڈاکٹروں نے وینٹی لیٹر پر رکھا تھا۔ امان اللہ خان سٹیج، ٹی وی اور فلموں کا بڑا نام ہیں۔ انہیں 2018 میں صدارتی پرائیڈ آف پرفارمنس ایوارڈ بھی دیا گیا تھا۔ انہوں نے کیرئیر کے دوران سینکڑوں ون مین شوز میں پر فارم کیا۔ بھارتی ٹی وی کے کامیڈی شوز میں بھی خود کو منوایا۔ امان اللہ خان کو کنگ آف کامیڈی کہا جاتا ہے۔ پاکستان سمیت دنیا بھر میں انکے کروڑوں مداح سوگوار ہیں۔ امان اللہ نے پاکستانی تھیٹر کو نئی جہت سے روشناس کرایا۔ امان اللہ اور مستانہ کی جوڑی نے اسٹیج ڈراموں میں دھوم مچائی۔ امان اللہ نے تقریباً چار دہائیوں پر مشتمل کیرئیر میں سینکڑوں اسٹیج ڈراموں میں کام کیا۔