Friday, October 7, 2022

ڈی چوک کی طرف پیش قدمی سے اتحاد ٹوٹنے کاخطرہ

ڈی چوک کی طرف پیش قدمی سے اتحاد ٹوٹنے کاخطرہ
اسلام آباد ( 92 نیوز) مولانا فضل الرحمان تو کشتیاں جلا کر آئے تھے مگر اپوزیشن کی دو بڑی جماعتیں کندھے سے کندھا ملا کر چلتی دکھائی نہیں دے رہیں ، ڈی چوک کی طرف پیش قدمی اور تصادم کی صورت میں مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی مولانا کا ساتھ چھوڑ جائے گی۔ مولانا فضل الرحمان کا آزادی مارچ اسلام آباد پہنچ کر دھرنے میں تبدیل ہو گیا، بلاول بھٹو نے بھی مارچ کے شرکاء سے خطاب کیا جب کہا شہباز شریف بھی جوش خطابت کرتے دکھائی دیے ۔ مگر ذرائع کا کہنا ہے کہ آزادی مارچ  کے شرکاء میں دوسرے ہی روز دراڑیں پڑنے لگی ہیں ،   مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی نے ڈی چوک پر دھرنا دینے سے انکار کردیا اور اتحاد سے علیحدہ ہونے کی دھمکی دے دی۔ پاکستان پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما نیئر بخاری نے کہا کہ پیپلزپارٹی وزیر اعظم کا استعفیٰ چاہتی  اور نئے انتخابات  تاہم دھرنے کے حق میں نہیں ۔