Thursday, December 8, 2022

چیف جسٹس کا مقتول زینب کے ملزم کی چھتیس گھنٹے میں گرفتاری کا حکم

چیف جسٹس کا مقتول زینب کے ملزم کی چھتیس گھنٹے میں گرفتاری کا حکم

لاہور (92 نیوز) لاہور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس نے آئی جی پنجاب کو قصورمیں بچی سے زیادتی کے ملزم کو چھتیس گھنٹے میں گرفتارکرنے کا حکم دے دیا۔
بچوں سے زیادتی اور قتل کے معاملے پر قانون سازی کے لئے درخواست کی سماعت ہوئی۔ سماعت چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ اور جسٹس صداقت علی خان نے کی۔
دوران سماعت قصور میں زیادتی واقعہ پر آئی جی پنجاب نے رپورٹ پیش کر دی جس کے بعد عدالت نے چھتیس گھنٹے میں ملزموں کو گرفتار کرنے کا حکم دے دیا۔
آئی جی پنجاب نے یقین دہانی کرائی کہ ملزموں کو جلد گرفتار کر لیا جائے گا۔
درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا کہ بچوں سے زیادتی اور قتل کے معاملے پر قانون سازی نہ ہونے کی وجہ سے ملزمان آزادانہ گھوم رہے ہیں۔
قصور میں بچوں سے زیادتی اور قتل کے واقعات میں مسلسل اضافے کی ذمہ دار حکومت ہے۔
دوسری طرف چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے ریمارکس دیئے کہ اس کیس میں کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی جس کے بعد مزید سماعت پیر تک ملتوی کر دی گئی۔