Tuesday, December 7, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

چودھری نثار کو این اے 63 اور 59 دونوں حلقوں سے شکست

چودھری نثار کو این اے 63 اور 59 دونوں حلقوں سے شکست
July 26, 2018
اسلام آباد (92 نیوز) جیپ کے تین ٹائر پنچر ہوگئے، سابق وزیر داخلہ اور نواز شریف کے قریبی دوست چوہدری نثار کو قومی اسمبلی کے دو حلقوں اور صوبائی اسمبلی کے ایک حلقے سے شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ چوہدری نثار مسلم لیگ نون سے اپنی 33 سالہ رفاقت اور شریف برادران سے دوستی ترک کے آزاد امیدوار کی حیثیت سے میدان میں اُترے، لیکن انتخابی نتائج اُن کے لیے حوصلہ افزا ثابت نہیں ہوئے۔ راولپنڈی  سے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 63 کے غیر سرکاری و غیر حتمی نتیجے کے مطابق چوہدری نثار کو پاکستان تحریک انصاف کے غلام سرور خان نے شکست سے دوچار کر دیا ۔ غلام سرور نے 64 ہزار 301 ووٹ حاصل کر کے کامیابی سمیٹی جبکہ چوہدری نثار کو 48 ہزار 497 ووٹ ملے ۔ قومی اسمبلی کے حلقے این اے 59 سے موصولہ غیر سرکاری غیر حتمی نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے غلام سرور خان چوہدری نثار علی خان کو شکست دینے میں کامیاب ہو گئے ہیں۔ چوہدری نثار کو صوبائی حلقے پی پی 12 سے بھی شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ انہوں نے حلقے میں 11 ہزار 99 ووٹ حاصل کیے جبکہ پی ٹی آئی کے واثق قیوم نے 27 ہزار 351 ووٹ حاصل کرکے کامیابی سمیٹی ۔ ناقابل شکست سمجھے جانے والے چوہدری نثار 2018 میں تین حلقوں سے شکست کے بعد بلآخر صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی پی دس سے موصول ہونے والے غیر سرکاری، اور غیر حتمی نتائج کے مطابق چوہدری نثار علی خان 53145 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے ہیں۔