Friday, January 21, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

چودھری شوگر ملز منی لانڈرنگ،تحقیقات دوبارہ کھولنے کا فیصلہ

چودھری شوگر ملز منی لانڈرنگ،تحقیقات دوبارہ کھولنے کا فیصلہ
June 30, 2017

اسلام آباد(92نیوز)چودھری شوگر ملز منی لانڈرنگ کے خلاف ختم کی گئی تحقیقات کو دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے ۔چیئرمین ایس ای سی پی کاکہنا ہے  اگر کسی اہلکار یا افسر نے ریکارڈ میں ردو بدل کیا ہے تو اس کا ذمہ دار ادارے کے سربراہ کو ٹھہرانے کی روایت درست نہیں ۔

تفصیلات کےمطابق ایس ای سی پی  کی طرف سے چودھری شوگر ملز کے ریکارڈ میں ردو بدل کے معاملے پر نئے انکشافات سامنے آرہے ہیں ۔پیپلزپارٹی کے دور میں چودھری شوگر ملزکے خلاف منی لانڈرنگ کی تحقیقات کوختم کرنے کے محرکات کی تفتیش کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے، ذرائع نے نائٹی ٹو نیوز کو بتایاکہ پانامہ جے آئی ٹی  نے  پیپلزپارٹی دور میں   چودھری شوگر ملز کے خلاف  ختم کی گئی منی لانڈرنگ کی تحقیقات کو دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔اس حوالے سے اس بات کاپتہ چلایاجائے گا کہ یہ تحقیقات کس مرحلے پر بند کی گئیں اور کن محرکات کے تحت یہ اقدام اٹھایا گیا۔ اس بات کا بھی جائزہ لیاجائے گا کہ کہ ان تحقیقات کے نتیجے میں کیامنی لانڈرنگ ثابت ہوچکی تھی یاابھی معاملہ تفتیش کے مرحلے میں ہی تھا۔جے آئی ٹی اس بات کا بھی پتہ چلائے گی کہ  ایس ای  سی پی  کی طرف سے ریکارڈ بدلنے کا مقصد کیا تھا ۔دوسری طرف ایس ای سی پی کے چیئرمین ظفر حجازی  نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ادارے کے افسروں اورملازموں کی کوتاہیوں کا ذمہ دار اس ادارے کے سربراہ کو ٹھہرانا  اچھی روایت نہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ ریکارڈ ٹیمپرنگ کی تحقیقات جاری ہیں اس کو کھلے عام بیان نہیں کیا جاسکتا ۔

ریکارڈ ٹیمپرنگ پر اپنے رد عمل میں تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا کہ اگر ریکارڈ میں ردو بدل کی بات سچ ہے تو یہ انصاف کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کے مترادف  ہے ۔ عمران خان کا کہنا ہے کہ ریکارڈ میں ردو بدل کرنا جرم ہے اور ایسا جرم کرنے والے کو جیل میں ہونا چاہئے۔