Thursday, October 6, 2022

پی ٹی وی حملہ کیس، انسداد دہشتگردی عدالت کا کپتان کو بیان ریکارڈ کرانے کا حکم

پی ٹی وی حملہ کیس، انسداد دہشتگردی عدالت کا کپتان کو بیان ریکارڈ کرانے کا حکم

اسلام آباد (92 نیوز) انسداد دہشتگردی عدالت نے عمران خان کی ضمانت میں سات دسمبر تک توسیع دیتے ہوئے پی ٹی وی اور پارلیمنٹ حملہ کیس سمیت چار مقدمات میں شامل تفتیش کرنے اور پولیس کے سامنے بیان ریکارڈ کرانے کا حکم دے دیا۔ اس پر عمران خان نے کہا کہ ہم اداروں کو مضبوط کرنا چاہتے ہیں اور اس لیے میں تھانے میں جانے کیلئے بھی تیار ہوں۔
انسداد دہشتگردی عدالت میں عمران خان کے وکیل بابر اعوان نے حاضری سے استثنا کی درخواست دی جس پر جج شاہ رخ ارجمند نے پوچھا کیاضمانت قبل از گرفتاری میں استثنا کی درخواست دی جا سکتی ہے؟۔
بابر اعوان نے موقف اپنایا کہ استثنا مل سکتی ہے جبکہ سرکاری وکیل نے مخالفت کی۔ عدالت نے عمران خان کو شامل تفتیش کرنے اور چاروں مقدمات میں بیان ریکارڈ کرانے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت سات دسمبر تک ملتوی کر دی۔
سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو میں عمران خان نے کہا کہ نواز شریف پاکستان کی عدلیہ، فوج اور اداروں پر حملہ کر رہا ہے۔ کیس سے ادارے مضبوط ہوئے۔ دھاندلی کی بنا پر دھرنا دیا۔
عمران خان نے کہا کہ نواز شریف جمہوریت کو نقصان پہنچا رہے ہیں اور پاکستان کا پیسہ نواز شریف باہر لے کر جانے والا چور ہے۔ انہوں نے کہا کہ 300 ارب روپے کی 29 جائیدادوں کا حساب دیں۔
عمران خان نے مزید کہا کہ ایک مجرم قوم کو مقروض بنانے والا پارٹی کا سربراہ کیسے بن سکتا ہے؟۔ وہ بجائے جواب دینے کے عدالتوں کیخلاف باتیں کر رہےہیں۔