Saturday, November 27, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

پی ایم ڈی سی  کی تباہی کی ذمہ داری ڈاکٹر عاصم پر عائد ہوتی ہے  : سائرہ افضل تارڑ

پی ایم ڈی سی  کی تباہی کی ذمہ داری ڈاکٹر عاصم پر عائد ہوتی ہے  : سائرہ افضل تارڑ
August 31, 2015
اسلام آباد(92نیوز)وزیر مملکت سائرہ افضل تارڑ نے پی ایم ڈی سی کی تباہی کا ذمہ دار ڈاکٹر عاصم کو  قرار دیدیا وزیر صحت نے پی ایم ڈی سی میں بد عنوانیوں اور بے ضابطگیوں کی محکمانہ تحقیقات کا بھی حکم دیدیا انھوں نے اعلان کیا کہ پی ایم ڈی سی کے کیسز ایف آئی اے اور نیب کے حوالے کیے جائیں گے۔ اسلام آباد میں  پریس کانفرنس کے دوران سائرہ افضل تارڈ نے بتایا کہ پی ایم ڈی سی کی تباہی میں ڈاکٹر عاصم کا ہاتھ ہے۔انھوں نے کہا کہ ڈاکٹر عاصم کی گرفتاری کے اگلے ہی دن پی ایم ڈی سی کو  صدارتی آرڈنیننس کے تحت تحلیل کرنا محض اتفاق ہےان کا کہنا تھا کہ اس سے قبل پی ایم ڈی کے حوالے سے آرڈیننس لانے میں  پارلیمنٹ کے اندر مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ ڈاکٹر عاصم کی وجہ سے پیپلز پارٹی نے بھی آرڈیننس کی مخالفت کی سائرہ افضل تارڈ نے کہا کہ پی ایم ڈی سی میں کرپشن کرنے والوں کے احتساب کا وقت آگیا ہے۔مینجمنٹ کمیٹی کو پی ایم ڈی سی تحقیقات کی کھلی چھوٹ ہوگی۔ سائرہ افضل تارڑ کا کہنا تھا کہ ساری کونسل ہی غیر قانونی تھی مگر عدالتی حکم امتناعی کی بنیاد پر لوگ طویل عرصہ کونسل پر قابض رہے انھوں نے نیب اور ایف آئی اے سے بھی تحقیقات  کرانے کا اعلان کیا۔ وزیرمملکت برائے صحت نے بتایا کہ کونسل کے نئے ایکٹ کے تحت ممبران کی تعداد 85 سے 35 کردی گئی ہے،،جبکہ  ذاتی مفادات کے متصادم کے پیش نظر کالجز کے مالکان کو کونسل کا ممبر نہیں بنایا جائے گا۔ انھوں نے اعلان کیا کہ قانون کے تحت ڈاکٹر ندیم اکبر ہی کونسل کے رجسٹرار ہیں تاہم مینجمنٹ کمیٹی اس حوالے سے حتمی فیصلہ کریگی دوسری جانب وزارت قانون نے اپنی رائے میں موجودہ رجسٹرار ڈاکٹر شائستہ کو بھی غیر قانونی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ڈاکٹر ندیم اکبر قانونی طور پر آج بھی  پی ایم ڈی سی کے رجسٹرار ہیں۔