Tuesday, October 4, 2022

پی آئی اے کی نجکاری کیخلاف اپوزیشن کاقومی اسمبلی سے واک آﺅٹ

پی آئی اے کی نجکاری کیخلاف اپوزیشن کاقومی اسمبلی سے واک آﺅٹ
اسلام آباد (92نیوز) پی آئی اے کی نجکاری اور نئے ٹیکسوں کے خلاف اپوزیشن کا قومی اسمبلی سے واک آوٹ‘ خورشید شاہ حکومت پر برس پڑے۔ ان کا کہنا تھا کہ لولی پاپ نہ دیا جائے، اپوزیشن پاگل نہیں‘ پی ٹی سی ایل کی نجکاری سے سبق سیکھا جائے۔ نئے ٹیکسوں سے مہنگائی بڑھ گئی‘ عام آدمی بھوکا ہوتا ہے تو دہشت گردوں کا ساتھ دیتا ہے۔ تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے کہا ہے کہ وہ نہیں چاہتے کہ ادارے تباہ ہوں مگر پارلیمنٹ سے کچھ نہ چھپایا جائے‘ مہنگائی ہر آدمی پر اثر ڈالتی ہے۔ عام آدمی بھوکا ہوتا ہے تو دہشت گردوں کا ساتھ دیتا ہے۔ اپوزیشن نے نئے ٹیکسوں کے خلاف اسمبلی سے واک آوٹ کیا۔ قومی اسمبلی کا اجلاس سپیکر سردار ایاز صادق کی صدارت میں ہورہا ہے جس میں قومی اسمبلی میں پی آئی اے کے نئے آڑڈیننس پر گرما گرم بحث تو ہورہی ہے لیکن اجلاس میں صرف 20 ارکان موجود ہیں۔ قومی اسمبلی کے اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے قائد حزب اختلاف خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم کو بھی کہیں کہ وہ ایوان میں آیا کریں۔ حکومت کہتی ہے کہ آرڈیننس لانے کا مقصد پی آئی اے کو مضبوط کرنا ہے‘ یہ لولی پاپ نہ دیا جائے۔ خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ وہ نہیں چاہتے کہ ادارے تباہ ہوں مگر پارلیمنٹ سے کچھ نہ چھپایا جائے۔ عام آدمی بھوکا ہوتا ہے تو دہشت گردوں کا ساتھ دیتا ہے‘ مہنگائی ہر آدمی پر اثر ڈالتی ہے۔ اپوزیشن رہنما خورشید شاہ نے کہا کہ 40 ارب کے نئے ٹیکسز سے سب متاثر ہوئے ہیں‘ حکومت ٹیکس دینے والوں پر ہی ٹیکس لگا رہی ہے۔