Saturday, December 3, 2022

پورے ملک میں نظام الصلوٰة نافذ کرنے کا فیصلہ

پورے ملک میں نظام الصلوٰة نافذ کرنے کا فیصلہ
اسلام آباد (92نیوز) اسلام آباد کے بعد وزارت مذہبی امور نے نظام الصلوٰة کو ملک بھر میں نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس حوالے سے صوبوں سے مشاورت کی جائے گی۔ تفصیلات کے مطابق وزارت مذہبی امور نے اسلام آباد میں نظام الصلوٰة کے نفاذ کے بعد اس کا دائرہ کار پورے ملک میں بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ نظام الصلوٰة کے نافذ سے قبل وزارت نے اسلام آباد میں علماءسے یکساں نماز کے اوقات کےلئے مشاورت کی تھی جس کے بعد امام کعبہ کی اسلام آباد آمد کے موقع پر فیصل مسجد میں اس کاعلان کیا گیا۔ وزارت مذہبی امور نے ایک کیلنڈر بھی نماز کے اوقات کے حوالے سے تیار کیا جس کو اسلام آباد کی تمام مساجد میں تقسیم کیا گیا۔ وزارت مذہبی امور نے اس کا دائرہ کار اب پورے ملک تک پھیلانے کیلئے مشاورت شروع کر دی ہے۔ وفاقی وزیر سردار محمد یوسف نے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف سے بھی رابطہ کیا ہے۔ وزیراعلیٰ پنجاب نے وفاقی وزیر کو یقین دہانی کرائی ہے کہ اس حوالے سے صوبے میں علماءسے مشاورت کی جائے گی۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے نظام الصلوٰة کو خوش آئند قرار دیا ہے۔ وزارت مذہبی امور نے نظام الصلوٰة کے حوالے سے دیگر صوبوں سے بھی مشاورت کا فیصلہ کیا ہے۔ وفاقی وزیر سردار محمد یوسف کا کہنا ہے کہ نظام الصلوٰة پر عملدرآمد سے ملک میں اتحاد اور یکجہتی کو فروغ ملے گا۔ وزارت مذہبی امور کا کہنا ہے کہ علماءعوام میں اتحاد و اتفاق کو یقینی بنانے کیلئے نظام الصلوٰة پر عملدرآمدکو یقینی بنائیں۔