Friday, September 30, 2022

اداکار بدر منیر کو مداحوں سے بچھڑے 12 برس بیت گئے

اداکار بدر منیر کو مداحوں سے بچھڑے 12 برس بیت گئے
پشاور (92 نیوز) پشتو فلموں کے بے تاج بادشاہ اداکار بدر منیر کو مداحوں سے بچھڑے 12 برس بیت گئے۔ اداکار بدر منیر کو گزرے 12 برس ہوگئے مگر وہ آج بھی پشتو فلموں کے شائقین کے دلوں میں زندہ ہیں۔ بدر منیر نے سات سو سے زائد پشتو، اردو اور پنجابی فلموں میں اداکاری کی۔ بدر منیر کو بجا طور پر پشتو فلموں کا سلطان راہی کہا جا سکتا ہے۔ دونوں اداکاروں کئی سطحوں پر مماثلت ہے، مثلاً دونوں نے اپنے ابتدائی دور میں کئی برس تک چھوٹے چھوٹے کردار کیے، دونوں کی اصل شہرت اُردو کی بجائے علاقائی فلمیں ہیں اور دونوں کے عروج و زوال کا زمانہ کم و بیش ایک ہی ہے۔ اگرچہ بدر منیر کی بنیادی شہرت ایک پشتو اداکار کی حیثیت سے ہے لیکن اپنے طویل فلمی کیرئر کے دوران انھوں نے چالیس کے قریب اُردو فلموں میں بھی اداکاری کے جوہر دکھائے۔ اِن کے دورِ عروج میں پنجابی فلموں کے پروڈیوسر بھی انہیں کاسٹ کرنے کے درپے رہتے تھے لیکن بدر منیر پنجابی نہیں بول سکتے تھے، اس لیے انھوں نے گنتی کی چند پنجابی فلمیں ہی قبول کیں۔ بدر منیر کی آخری پشتو فلم ’’زمانہ پاگل جانانہ‘‘ 2005ء میں نمائش کے لیے پیش ہوئی تھی اور اُس کے بعد سے وہ صاحبِ فراش تھے۔ عوام میں وہ آخری مرتبہ پشتو چینل خیبر کے ایک سٹیج شو میں نمودار ہوئے جہاں انہوں نے مداحوں کے پُرزور اصرار پر پشتو میں ایک گیت بھی سنایا۔ 11 اکتوبر 2008ء کو 67 برس کی عمر میں اِن کا انتقال ہوا۔