Monday, January 17, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

پاک بحریہ اور ملائیشین رائل نیوی کے مابین مشق”مال پاک دوئم“ کا انعقاد

پاک بحریہ اور ملائیشین رائل نیوی کے مابین مشق”مال پاک دوئم“ کا انعقاد
February 17, 2019
 کراچی (92 نیوز) پاک بحریہ اور ملائیشین رائل نیوی کے مابین مشق”مال پاک دوئم“ کا انعقاد کیا گیا۔ رائل ملائیشین نیوی کے جہاز کے ڈی کستوری (KD KASTURI) اور کے ڈی مہا وانگسا(MAHAWANGSA) کثیر الملکی بحری مشق”امن 2019“ میں حصہ لینے کے لئے 7 فروری 2019 کو کراچی پہنچے تھے۔ مشق کے اختتام پر ملائیشیاء کے جہازوں نے پاک بحریہ کے جہازوں کے ساتھ دو طرفہ مشق ”مال پاکII-“ میں حصہ لیا۔ یہ مال پاک مشقوں کے سلسلے کی دوسری مشق تھی ، پہلی مشق کثیر الملکی بحری مشق ”لیما“کے اختتام پر ملائیشیاء میں منعقد ہوئی تھی۔ پاک بحریہ کے جہاز پی این ایس سیف نے Z9ECہیلی کاپٹر کے ہمراہ پی این ایس عظمت اور لانگ رینج میری ٹائم ایئر کرافٹ کے ساتھ اس مشق میں حصہ لیا۔ مشق کے ہاربر فیز کے دوران مشترکہ منصوبہ بندی اور رابطہ سازی پر مشتمل سرگرمیوں کا انعقاد ہوا جبکہ سی فیز کے دوران حتمی منصوبوں کو عملی جامہ پہنایا گیا۔ ہار بر سر گرمیاں کانفرنسز، تربیتی سہولیات کے دورے اور صوتی رابطوں کی جانچ پر مشتمل تھیں۔ دورہ کرنے والے جہازوں کے افسران اور جوانوں نے کھیلوں کی سر گرمیوں میں بھی حصہ لیا۔ مہمان آفیسرزو جوانوں کے اعزاز میں پی این ایس سیف پر عشائیے کا اہتمام بھی کیا گیا۔ مشق کے سی فیز کے دوران ہر قسم کے میری ٹائم آپریشنز کا عملی مظاہرہ کیا گیا جس میں سمندر سے سمندر میں ہدف کو نشانہ بنانے، سمندر سے فضا میں ہدف کو نشانہ بنانے اور سرچ اینڈ ریسکیو آپریشنز کی مشقیں شامل تھیں۔ پاکستان اور ملائیشیاء کے درمیان مضبوط برادرانہ تعلقات موجود ہیں ۔ دونوں ممالک تجارت اور عسکری اشتراک کے مختلف شعبوں میں بھر پور تعاون کرتے ہیں۔ دونوں ممالک کی بحری افواج کثیر الملکی اور دو طرفہ مشقوں میں حصہ لینے کے ساتھ ساتھ دفاعی نمائشوں میں بھی بھر پور انداز سے شریک ہوتی ہیں ۔ رائل ملائیشین نیوی کے جہازوں کے ڈی کستوری اور کے ڈی مہاوانگسا کا کثیر الملکی بحری مشق” امن19“ میں حصہ لینے کے لئے پاکستان کا دورہ اور باہمی مشق ”مال پاکII-“ میں شرکت دونوں ممالک کی بحری افواج کے مابین اشتراک اور مشترکہ آپریشنز کرنے کی صلاحیتوں میں اضافے کا باعث ہو ںگے۔