Friday, December 2, 2022

پاکستان کی بندرگاہوں پر بین الاقوامی بحری جہازوں کی آمدورفت متاثر ہونے کا خدشہ

پاکستان کی بندرگاہوں پر بین الاقوامی بحری جہازوں کی آمدورفت متاثر ہونے کا خدشہ

کراچی( ویب ڈیسک ) سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے بحری امور کے اجلاس میں خدشہ ظاہر کیا گیا کہ کراچی کے ساحلی علاقوں پر بدترین آلودگی کی وجہ سے بندرگاہوں پر بین الاقوامی بحری جہازوں کی آمد و رفت بند ہوسکتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے بحری امور کے اجلاس میں کمیٹی کو بریفنگ دی گئی کہ کراچی کے ساحلی علاقوں میں آلودگی میں دن بدن اضافہ ہو رہا ہے ۔ جس سے بین الاقوامی جہازوں کی آمد و رفت متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔

اجلاس میں کمیٹی کو بتایا گیا کہ کراچی کے سمندر میں ہر روز 50 کروڑ گیلن آلودہ پانی پھینکا جاتا ہے جس میں فیکٹریوں کا زہر آلود پانی بھی شامل ہے  ۔ اس پانی کو بغیر کسی ٹریٹمنٹ کے براہ راست سمندر میں ڈال دیا جاتا ہے۔