Sunday, October 2, 2022

پاکستان نے ڈی پورٹ افراد کو لیکر آنیوالے طیارے کو واپس یونان بھیج دیا

پاکستان نے ڈی پورٹ افراد کو لیکر آنیوالے طیارے کو واپس یونان بھیج دیا
اسلام آباد (92نیوز) بے نظیر ایئر پورٹ پر ایف آئی اے امیگریشن حکام نے وزیر داخلہ کے حکم پر یونان سے بے دخل30پاکستانیوں کو خصوصی طیارے سے اترنے سے روک دیا۔ کئی گھنٹے انتظار کے بعد طیارہ بے دخل افراد کو لے کر واپس چلا گیا۔ بے دخل پاکستانیوں کو کوائف کی وزارت داخلہ سے تصدیق کے بغیر لایا گیا تھا۔ تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے امیگریشن حکام نے وزیر داخلہ چودھری نثار علی کی خصوصی ہدایت پر یونان سے بے دخل پاکستانیوں کو طیارے سے اترنے سے روک دیا۔ وزرات داخلہ سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق یونان سے بے دخل کئے گئے پاکستانیوں کے کوائف کی وزرات داخلہ سے تصدیق نہ کرانے اور معاہدے کی خلاف ورزی پر طیارے سے بے دخل افراد کو لینے سے انکار کیا گیا۔ طیارے میں کل 49افراد شامل تھے جن میں سے 19افراد کی شناخت ہونے پر انہیں ایف آئی اے امیگریشن حکام نے اپنی تحویل میں لے لیا جبکہ 30 افراد کی شناخت نہ ہونے پر انہیں واپس بھجوا دیا گیا۔ بے دخل افراد کو واپس بھجوانے سے متعلق وزیر داخلہ چودھری نثار علی کا کہنا ہے کہ غیر تصدیق شدہ کوائف پر کسی بھی ملک سے بے دخل پاکستانیوں کو اسی طیارے پر ہی واپس بھجوا دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ یورپی ممالک کے وفد سے تمام معاملات طے پانے کے باوجود ایک ملک کی جانب سے معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی۔ چودھری نثار نے بے دخل افراد کی غیر قانونی طریقے سے بےدخلی کو انسانی حقوق کی خلاف ورزی اور انسانیت کی تضحیک قرار دیا ہے۔ واضح رہے کہ 29اکتوبر کو اٹلی سے ایک عثمان غنی نامی پاکستانی کو دہشت گردی کے شعبے میں بے دخل کیا گیا تھا اور اس کے ساتھ اٹلی کی پولیس بھی پاکستان آئی تھی تاہم تفتیش کے بعد بے دخل ہونےوالے پاکستانی کو رہا کر دیا گیا جس کا وزیر داخلہ نے نوٹس لیا تھا جبکہ وزیر داخلہ کی جانب سے واضح ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ بغیر تصدیق کے بے دخل افراد کو لانے والی ائیر لائن کو بھی جرمانہ ہوگا۔