Thursday, January 27, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

پاکستان : فضائی حادثوں میں اب تک 700 سے زائد افراد اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے  

پاکستان : فضائی حادثوں میں اب تک 700 سے زائد افراد اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے  
December 7, 2016

 لاہور(92نیوز)پاکستان میں فضائی حادثوں کی تاریخ خاصی طویل اور المناک ہے ۔پی آئی اے ، پاکستان ایئرفورس کے مسافر طیارے اور نجی ایئر لائنز کے طیاروں کے حادثات  میں سات سو سے زائد افراد ہلاک ہو چکےمسافر جہازوں کو کب اور کہاں کہاں حادثات  پیش آئے دیکھتے ہیں اس رپورٹ میں ۔

تفصیلات کےمطابق پاکستان میں کئی فضائی حادثات ہوئے تاہم اٹھائیس جولائی دو ہزار دس کو  کراچی سے اسلام آباد جانے کے لئے اُڑان بھرنے والا نجی کمپنی ایئربلیو کا مسافر طیارہ مارگلہ کی پہاڑیوں میں گر کر تباہ ہو گیا ۔۔اس حادثے میں ایک سو باون افراد کی جانیں ضائع ہوئی تھیں یہ پاکستان کی تاریخ کا سب سے خوفناک حادثہ تھا۔ دس جولائی دو ہزار چھ کو ایک اور المناک حادثہ ہوا  اس روز پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائن کا فوکر طیارہ ملتان ائر پورٹ سے اڑان بھرنے کے کچھ دیر بعد ہی گر کر تباہ ہو گیا  اُس میں پینتالیس افراد جاں بحق ہوئے ۔ پانچ نومبر دو ہزار دس کو کراچی میں ایک نجی کمپنی کا چھوٹا ہوائی جہاز گر کر تباہ ہو گیا ۔ اس حادثے کے نتیجے میں جہاز میں سوار تمام بائیس افراد ہلاک ہوگئے ۔  پچیس  اگست اُنیس سو اُناسی  کو اسلام آباد سے گلگت جاتے ہوئے ایک فوکر طیارہ حادثے کا شکار ہوا اور اس حادثے میں چون افراد موت کے منہ میں چلے گئے تھے۔

سترہ اگست انیس سو اٹھاسی کو بہاولپور کے قریب سی ون تھرٹی گر کر تباہ ہو گیا   جس میں جنرل ضیاء الحق سمیت تیس اہم شخصیات  جاں بحق ہوئیں۔

پاکستان میں اب تک فوجی مسافر طیاروں کے دس حادثے پیش آئے ہیں۔ آخری حادثہ پاکستان ایئر فورس کے فوکر طیارے کا تھا جو بیس فروری دو ہزار تین کو پیش آیا۔ فوکر طیارہ کوہاٹ کے قریب گر کر تباہ ہوا۔ اس  میں اس  وقت کے پاکستانی فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل مصحف علی میر سترہ افسران سمیت جاں بحق ہوئے تھے۔