Tuesday, November 30, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

افغانستان میں انسانی بحران سے بچنے کیلئے عالمی کاوشیں ناگزیر ہیں، آرمی چیف

افغانستان میں انسانی بحران سے بچنے کیلئے عالمی کاوشیں ناگزیر ہیں، آرمی چیف
November 12, 2021 --- ویب ڈیسک

راولپنڈی (92 نیوز) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے امریکا، روس اور چین کے افغانستان کیلئے خصوصی ایلچیوں نے ملاقاتیں کیں، افغانستان کی سکیورٹی صورتحال اوردوطرفہ تعاون پر گفتگو، آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف نے کہا افغانستان میں انسانی بحران سے بچنے کے لیے عالمی کاوشیں ناگزیر ہیں، پاکستان تمام ممالک سے دوطرفہ مفید تعلقات کی روایت برقرار رکھنا چاہتا ہے۔ 

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغانستان تھامس ویسٹ نے جی ایچ کیو میں ملاقات کی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف اور امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغانستان کے درمیان ملاقات میں باہمی دلچسپی، افغانستان کی سیکیورٹی صورتحال، دوطرفہ تعاون پر گفتگو کی گئی۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا پاکستان امریکا کے ساتھ طویل المیعاد کثیر الجہتی تعلقات کا خواہشمند ہے۔ پاکستان دوطرفہ سطح پر مفید تعلقات کی روایت کو برقرار رکھنا چاہتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ افغانستان میں انسانی بحران سے بچنے کے لیے عالمی کاوشیں ناگزیر ہیں۔ مزید کہا کہ افغان عوام کی معاشی ترقی کے لیے مربوط عالمی نقطہ نظر ضروری ہے۔

امریکی نمائندہ خصوصی تھامس ویسٹ نے افغان صورتحال، سرحدی انتظام کی خصوصی کاوشوں کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی علاقائی استحکام کے لیے کاوشیں انتہائی قابل قدر ہیں۔ اُن کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان سے ہر سطح پر سفارتی تعاون میں مزید وسعت کے لیے پرعزم ہیں۔

دوسری جانب آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے روسی صدر کے خصوصی نمائندہ برائے افغانستان ضمیر کابولوو نے بھی جی ایچ کیو میں ملاقات کی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق دونوں کے درمیان باہمی دلچسپی، افغانستان کی سکیورٹی صورتحال، دوطرفہ تعاون پر گفتگو کی گئی۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ پاکستان تمام علاقائی ممالک سے دوطرفہ سطح پر مفید تعلقات کی روایت کو برقرار رکھنا چاہتا ہے۔ انہوں نے کہا پاکستان روس کے ساتھ طویل المیعاد کثیر الجہتی تعلقات کا خواہشمند ہے۔

سپہ سالار نے کہا افغانستان میں انسانی بحران سے بچنے کے لیے عالمی کاوشیں ناگزیر ہیں۔ افغان عوام کی معاشی ترقی کے لیے مربوط عالمی نقطہ نظر ضروری ہے۔

ضمیر کابولوو نے افغان صورتحال، سرحدی انتظام کی خصوصی پاکستانی کاوشوں کو سراہا، انہوں نے کہا پاکستان کی علاقائی استحکام کے لیے کاوشیں انتہائی قابل قدر ہیں۔ پاکستان سے ہر سطح پر سفارتی تعاون میں مزید وسعت کے لیے پرعزم ہیں۔

ادھر آرمی چیف سے چین کے نمائندہ خصوصی برائے افغانستان ژوئی یاؤ ینگ نے جی ایچ کیو میں ملاقات کی۔ آئی ایس پی آرکے مطابق باہمی دلچسپی، افغانستان کی سکیورٹی صورتحال، دوطرفہ تعاون پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ مستحکم خطے کے لیے پُرامن اور خوشحال افغانستان ناگزیر ہے۔ افغانستان میں امن و خوشحالی کے لیے مربوط بین الاقوامی کاوشیں درکار ہیں۔

ژوئی یاؤ ینگ نے افغان صورتحال، سرحدی انتظام کی پاکستانی کاوشوں کو سراہا، پاکستان کی علاقائی استحکام کے لیے کوششیں قابل قدر ہیں۔ پاکستان سے ہر سطح پر سفارتی تعاون میں مزید وسعت کے لیے پُرعزم ہیں۔