Monday, January 24, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

پاناما کیس کی سماعت کے دوران کیلبری فونٹ بھی موضوع بحث رہا

پاناما کیس کی سماعت کے دوران  کیلبری فونٹ بھی موضوع بحث رہا
July 20, 2017

اسلام آباد(92نیوز)وہ جس کا چرچا پورے زمانے میں ہورہاتھا ،عالمی میڈیا پر ہیڈلائنز بن رہی تھیں اسی  کیلبری فونٹ کی گونج آج سپریم کورٹ میں بھی سنائی دی۔پاناما کیس کی سماعت کے دوران عدالت اور حسین نواز کے وکیل سلمان اکرم راجہ کے درمیان  دلچسپ جملوں کا تبادلہ بھی  ہوا۔

تفصیلا تکےمطابق پاناما کیس تو اپنی جگہ لیکن جب جے آئی ٹی نے اپنی رپورٹ میں مریم نواز کی ٹرسٹ ڈیڈ کی دستاویزات میں استعمال ہونے والے کیلبری فونٹ کی حقیقت بیان کی توعالمی میڈیا نے شریف خاندان کے سنگین مقدمات میں گھرنے کی پیش گوئی کردی۔ سپریم کورٹ کے معزز جج  جسٹس شیخ عظمت سعید نے کیلبری فونٹ کےبارے میں سلمان اکرم راجہ سے استفسار کیا انگریزی فونٹ کیلبری چرایا گیا، یہ فونٹ 2007 میں مارکیٹ میں آیا اور اس سے 2006 کی ٹرسٹ ڈیڈ کیسے ٹائپ کی گئی۔ سلمان اکرم  کا کہنا تھا کہ2004 میں یہ فونٹ عام استعمال ہورہاتھا۔ جس پرجسٹس شیخ عظمت سعید نے پوچھا کہ کیا کوئی قانونی فرم فونٹ چوری کرکے ٹرسٹ ڈیڈ تیار کرسکتی،یہ کام کوئی سٹوڈنٹ کرے تو مانا جاسکتا ہے لیگل فرم یہ کیسے کرسکتی ہے۔ بادی النظر میں سپریم کورٹ نے بھی کیلبری فونٹ پر حکومتی موقف کو تسلیم نہیں کیا۔ میڈیا اور سوشل  میڈیا پر  کیلبری فونٹ کو جتنا مزے لے لے کر اچھالا گیا اتنی پذیرائی جے آئی ٹی رپورٹ کو نہیں ملی۔ مین اسڑیم میڈیا پر تو کیلبری فونٹ کو لے کر یہ آرٹیکل بھی چھپ گے کہ کیلبری فونٹ نواز حکومت کے اختتام کا سبب بن سکتا ہے۔ کیلبری فونٹ نے شریف خاندان کو مشکل میں ڈال دیا۔ مائیکرو سافٹ کاکیلبری فونٹ پاکستانی سیاست کا محور بن چکا ہےکیلبری فونٹ  کی وجہ سے  مریم نواز بھی مشکل میں پھنس گئی ہیں۔ عالمی اور مقامی میڈیا نے اس کو فونٹ گیٹ کا نام دیاہے۔