Friday, January 21, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

پاناما کیس کی سماعت مکمل،فیصلہ محفوظ ،پانچ سماعتوں کی تفصلی رپورٹ نائنٹی ٹو نیوز پر

پاناما کیس کی سماعت مکمل،فیصلہ محفوظ ،پانچ سماعتوں کی تفصلی رپورٹ نائنٹی ٹو نیوز پر
July 21, 2017

اسلام آباد(92نیوز)پانامہ کیس کی سماعت مکمل فیصلہ محفوظ ہوگیا درخواست گزاروں ، وزیراعظم اور ان کے بچوں کے وکلاءنے دلائل دیئے کچھ نئی دستاویزات اور درخواستیں بھی آئیں 5 سماعتوں میں کیا ہوتا رہا اس کی تفصیل مندرجہ ذیل ہے۔

تفصیلات کےمطابق 17جولائی بروز سوموار۔۔جے آئی ٹی رپورٹ پیش ہونے کے بعد سپریم کور ٹ میں پانامہ کیس کی پہلی سماعت  تحریک انصاف کے وکیل نعیم بخاری جماعت اسلامی کے وکیل توفیق آصف اور شیخ رشید نے دلائل دیتے ہوئے وزیراعظم کو نااہل قرار دینے کی استدعا کی۔18جولائی کو وزیراعظم کے وکیل خواجہ حارث نے دلائل کا آغاز کیا وہ دو دن تک عدالت کو اس نکتے پر قائل کرنے کی کوشش کرتے رہے کہ جے آئی ٹی نے مینڈیٹ سے تجاوزکیا۔ وزیراعظم کی زیرملکیت لندن فلیٹس ہیں نہ کوئی جائیداد۔ 19جولائی کو خواجہ حارث کے دلائل مکمل ہونے پر وزیرخزانہ اسحاق ڈار کے وکیل طارق حسن نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ وہ اسحاق ڈار کے ٹیکس سے متعلق ریکارڈ جمع کرانا چاہتے ہیں۔۔اسی دن سماعت کے اختتام پر وزیراعظم کے بچوں کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے آئندہ سماعت پر نئی دستاویزات جمع کرانے کا اعلان بھی کیا۔

پھر20جولائی آیا سلمان اکرم راجہ نے169صفحاتی دستاویزات کے ساتھ درخواست بھی جمع کرائی۔ لیکن انہیں اس وقت سبکی ہوئی جب عدالت نے ان دستاویزات کو پرانی دستاویزات قرار دیدیا عدالت نے سلمان اکرم راجہ سے لندن فلیٹس گلف  عزیزیہ سٹیل مل اور منی ٹریل پر چبھتے سوالات بھی کئے لیکن سلمان اکرم راجہ تسلی بخش جواب نہ دے سکے۔ عدالت نے وزیراعظم کے بچوں کی جانب سے پیش کی گئی ٹرسٹ ڈیڈ کو بھی بادی النظر میں جعلی قرار دیا اورلندن کی نوٹری پبلک سے ہفتہ وار تعطیل کے روز تصدیق پر بھی اعتراض اٹھایا۔

21جولائی دن 11 بجے تک سلمان اکرم راجہ نے اپنے دلائل مکمل کیے۔ جس کے بعد وزیر خزانہ  اسحاق ڈار کے وکیل طارق حسن نے ایک ڈبے میں اسحاق ڈار کے ٹیکس سے متعلق 34 سالہ ریکارڈ پیش کیا۔ طارق حسن کے دلائل مکمل ہوئے تو عدالت نے نیب کے پراسیکیوٹر سے حدیبیہ پیپر مل کیس سے متعلق پوچھا۔جس پر نیب کے وکیل نے بتایا کہ ایک ہفتے میں اس کیس میں اپیل سے متعلق فیصلہ کیا جائیگا۔ نعیم بخاری نے جواب الجواب میں دلائل دیئے۔ بنچ نے آئینی امور اور وفاق کے موقف سے متعلق ایڈیشنل اٹارنی جنرل سے بھی رائے لی۔جماعت اسلامی کے وکیل توفیق آصف اور شیخ رشید نے دوبارہ آرٹیکل 62 اور 63 کے تحت وزیر اعظم اور اسحاق ڈار کی نااہلی پر زور دیا۔عدالت نے آخری سماعت کے موقع پر جے آئی ٹی رپورٹ کا والیم 10بھی کھولا اور اسے خواجہ حارث کو پڑھنے کےلئے دیا۔خواجہ حارث نے سماعت کے اختتام پر ایک درخواست بھی پیش کرنے کی استد عا کی جسے عدالت نے مسترد کردیا۔اور کیس کا فیصلہ محفوظ کرلیا۔