Friday, October 7, 2022

وزیراعظم کا پارلیمنٹ میں پروٹوکول ، فاروق ستار جھنجھلا گئے

وزیراعظم کا پارلیمنٹ میں پروٹوکول ، فاروق ستار جھنجھلا گئے

اسلام آباد ( 92 نیوز ) وزیراعظم کی پارلیمنٹ ہاؤس موجودگی کے دوران تمام راہداریوں پر کڑا پہرا رہا جس سے کئی رہنما پروٹوکول کی زد میں آگئے ۔ سکیورٹی اہلکاروں نے فاروق ستار کو بھی راستہ خالی کرنے کا کہہ دیا جس پر ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ اور حکام میں نوک جھوک ہو گئی ۔
وزیراعظم شاہد خاقان عباسی دو گھنٹے سے زیادہ وقت تک اپنے چیمبر میں موجود رہے ۔ اس دوران سیکیورٹی اہلکاروں نے وزیراعظم چیمبر سے ملحقہ تمام راہداریوں پر پہرے لگا دیئے ۔ کسی کو آنے جانے نہ دیا ۔ پارلیمانی اجلاس کے شرکا بھی وزیراعظم کے پروٹوکول کی زد میں آ گئے۔
سیکیورٹی اہلکار نے صحافیوں کے ساتھ فاروق ستار کو بھی راستہ خالی کرنے کا کہہ دیا۔ جس پر فاروق ستار اور سکیورٹی اہلکار کے درمیان دلچسپ نوک جھوک بھی ہوئی ۔
سکیورٹی اہلکار نے کہا کہ وزیراعظم نے گزرنا ہے رستہ خالی کر دیں ۔ فاروق ستار نے کہا کہ ارے بھائی پبلک کو نکالو پارلیمینٹیرینز کو کیوں نکالتے ہو۔ اہلکار نے منت سماجت کرتے ہوئے کہا سر نوکری کا مسئلہ ہے۔ جس پر فاروق ستار اہلکار کے کندھے پرتھپکی دیتے ہوئےکہا کہ تمہاری نوکری نہیں جاتی ۔ وزیراعظم ہیں کوئی بادشاہ تھوڑی ہے ۔ اہلکار کے زیادہ اصرار پر فاروق ستار جھنجھلا گئے۔