Friday, January 28, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

وزیراعظم نوازشریف نے 4سال ٹیکس گوشوارے جمع نہیں کرائے

وزیراعظم نوازشریف نے 4سال ٹیکس گوشوارے جمع نہیں کرائے
July 13, 2017

اسلام آباد(92نیوز)وزیراعظم نوازشریف نے 4سال ٹیکس گوشوارے جمع نہیں کرائے یکم جولائی 2009ءتک نوازشریف کے نام 5پاکستانی اور 3غیر ملکی اکاﺅنٹس کھلے۔

تفصیلات کے مطابق جے آئی ٹی نے نوازشریف کے ٹیکس گواشوروں کی رپورٹ بھی پبلک کردی ، 1997ءسے 1998 ، 2001سے 2002ء 2004ءسے 2005ءپھر 2007سے 2008 وزیراعظم نوازشریف نے ان سالوں میں ٹیکس گوشوارے جمع نہیں کرائے۔ ایف بی آر اور میاں نوازشریف کو بارہا کہا گیا لیکن کوئی ریکارڈ فراہم نہیں کیا۔

جے آئی ٹی نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ نوازشریف نے 1983-84ءمیں ٹیکس گوشوارے جمع کرانا شروع کئے۔ 26ستمبر 2009ءکے ٹیکس پیئرز رجسٹریشن سرٹیفکیٹ میں بھی نوازشریف کے کاروبار کا ثبوت ہے۔ٹیکس گوشواروں میں پتہ چوہدری شوگر ملز لمیٹڈ 146ابوبکر بلاک گارڈن ٹاﺅن لاہور درج ہے۔ نوازشریف 31دسمبر 2008ءتک چوہدری شوگر ملزکے 16لاکھ شیئرز کے مالک رہے یہی حصص 31جنوری 2013ءکو 20لاکھ اور 31جنوری 2016ءتک ایک کروڑ20لاکھ تک پہنچ گئے۔ ۔نوازشریف 2013ءتک چوہدری شوگر ملز سے تنخواہ لیتے رہےچوہدری شوگر ملز سے نوازشریف کے اکاﺅنٹ میں 2ٹرانزیکشنز بھی ہوئیں پہلی ٹرانزیکشن کی رقم 28جون 2010ءکو 56لاکھ 70لاکھ روپے منتقل ہوئی۔ دوسری ٹرانزیکشن کی رقم ایک کروڑ 80لاکھ 19ہزار روپے تھی۔ رپورٹ کے مطابق نوازشریف کے نام یکم جولائی 2009ءتک 5پاکستانی اور 3غیر ملکی کرنسی اکاﺅنٹس کھلےہر اکاﺅنٹ میں انہوں نے خود کو چوہدری شوگر ملز کا چیف ایگزیکٹو ظاہر کیا۔الائیڈ بینک میں اکاﺅنٹ شیئر ہولڈر کی حیثیت سے کھولا گیا۔نوازشریف کا والدہ شمیم اختر کے ساتھ بھی جوائنٹ اکاﺅنٹ انہی تفصیلات پر مشتمل ہے۔رپورٹ میں نوازشریف کے جے آئی ٹی میں پیشی کے موقع پر بیان کا بھی تذکرہ ہےجس میں انہوں نے کہا کہ ابتدائی طور پر وہ والد کے کاروبار میں حصص رکھتے تھےوہ خاندانی کاروبار میں چندکمپنیوں کے ڈائریکٹر بھی رہے1985ءکے بعد باقاعدہ کسی بھی کمپنی میں کاروبار سے منسلک رہے۔1981ءسے انہوں نے زندگی سیاست کےلئے وقت کردی۔رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ نوازشریف کے دونوں بیٹوں حسن ،حسین اور بیٹی مریم نواز نے بھی والد کے بیان کی تائید کی۔