Wednesday, October 5, 2022

نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن کا ملک میں اسلحہ قوانین تبدیل کرنے کا اعلان

نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن کا ملک میں اسلحہ قوانین تبدیل کرنے کا اعلان
 ویلنگٹن (92 نیوز) نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن نے کرائسٹ چرچ میں 2 مساجد پر حملے کو بدترین دہشتگردی قرار دیتے ہوئے ملک میں اسلحہ قوانین تبدیل کرنے کا اعلان کر دیا۔ نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم کی جانب سے کرائسٹ چرچ کی مساجد میں مشین گنوں سے خون کی ہولی کھیلنے والے کی ایک بار پھر مذمت کی گئی اور کہا حملہ آور کے پاس لائسنس یافتہ اسلحہ تھا ، اسلئےاسلحے سے متعلق قوانین بدل دیئے جائیں گے۔ وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا حملوں میں شہید تمام افراد کا تعلق مسلم ممالک بشمول پاکستان، ترکی، سعودی عرب ، انڈونیشیا اور ملائشیا سے تھا اور وہ مذکورہ تمام ممالک سے رابطے میں ہیں۔ وزیراعظم نے بتایا کہ کرائسٹ چرچ مساجد میں حملہ کرنے والا کئی ممالک کا سفر کر چکا ہے اور وہ نیوزی لینڈ کا مستقل رہائشی نہیں بلکہ آسٹریلیا کا شہری ہے اور نیوزی لینڈ آتا جاتا رہتا تھا۔ دوسری جانب شہر کی میئر لیانےڈیلزل کہتی ہیں بدترین قتل عام پر شہر سکتے کی کیفیت میں ہے۔ شہدا کی تدفین کا سلسلہ آج سے شروع کیا جائے گا۔ انہوں نے اپیل کی کہ عوام نفرت کی آواز کو ہمدردی اورمہربانی سے بدل دیں۔