Tuesday, December 7, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

نیب ریفرنسز: عدالت نے آئندہ سماعت پر مزید گواہوں کو طلب کر لیا

نیب ریفرنسز: عدالت نے آئندہ سماعت پر مزید گواہوں کو طلب کر لیا
January 23, 2018

اسلام آباد (92 نیوز) شریف خاندان کے احتساب کا سلسلہ جاری ہے ۔
نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کی احتساب عدالت میں ایک اور پیشی ہوئی ۔ پیشی میں دو گواہوں کے بیانات قلمبند کیئے گئے جبکہ تیسرے گواہ کا بیان ریکارڈ نہ ہو سکا ۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر مزید گواہوں کو طلب کرلیا ۔
احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے شریف خاندان کےخلاف نیب ریفرنسز کی سماعت کی ۔
سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف ، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر) صفدر پیش ہوئے ۔
پیشی کے موقع پر مسلم لیگ ن کے کارکنوں کی بڑی تعداد بھی عدالت پہنچ گئی جنہوں نے نعرے لگائے اور آگے جانے کی کوشش کی تاہم پولیس اور ایف سی نے سکیورٹی حصار بنا کر کارکنوں کو روک دیا ۔
دوران سماعت نجی بینک کے ریجنل منیجر آپریشنز غلام مصطفی نے اپنا بیان قلمبند کراتے ہوئے بتایا کہ وہ اور بینک آفیسر یاسر شبیر 22 اگست2017 کو نیب راولپنڈی میں پیش ہوئے ۔ یاسر شبیر نے نواز شریف کے بنک اکاﺅنٹس اور ٹرانزیکشن کی تفصیلات تفتیشی افسر کو دیں ،۔ تفتیشی افسر نے تصدیق شدہ کاپیاں وصول کرنے کے بعد سیزر میمو تیار کیا ۔ تفتیشی افسر کو دیئے گئے بیان میں ہل میٹل کا ذکر نہیں کیا گیا ۔
استغاثہ کے دوسرے گواہ اسسٹنٹ ڈائریکٹر نیب عزیر ریحان نے اپنے بیان میں بتایا کہ ایس ای سی پی کی خاتون افسر سدرہ منصور نے 25 اگست 2017 کو نیب میں پیش ہو کر دستاویزات پیش کیں ۔
تفتیشی افسر نے ان کا بیان بھی ریکارڈ کیا اور سیزر میمو پر دستخط کرائے ۔
استغاثہ کے تیسرے گواہ آفاق احمد کا بیان قلمبند نہ ہو سکا ۔
ڈپٹی پراسیکیوٹر نیب نے استدعا کی کہ سپریم کورٹ سے دستاویزات ملنے کے بعد آفاق احمد کا بیان قلمبند کیا جائے ۔
دوران سماعت ضمنی ریفرنس پر بھی مختصر سماعت ہوئی جس پر خواجہ حارث نے کہا کہ ضمنی ریفرنس 4 ماہ بعد دائر کیا جا رہا ہے ، پڑھنے کے لئے 7 دن کا وقت تو دیں ۔
عدالت نے سماعت 30 جنوری تک ملتوی کرتے ہوئے مزید 2 گواہوں کی طلبی کے سمن جاری کر دیئے ۔