Monday, October 3, 2022

نئی دہلی میں مسلم کش فسادات ، ہزاروں مسلمان عارضی کیمپوں میں رہنے پر مجبور

نئی دہلی میں مسلم کش فسادات ، ہزاروں مسلمان عارضی کیمپوں میں رہنے پر مجبور
 نئی دہلی (92 نیوز) نئی دہلی میں مسلم کش فسادات کے باعث ہزاروں مسلمان گھر بار چھوڑ کر عارضی کیمپوں میں رہنے پر مجبور ہیں ۔ بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں فسادات کے دوران ہندو بلوائیوں نے مسلمانوں کا سب کچھ تباہ کر دیا۔ پُرتشدد کارروائیوں کے بعد ہزاروں مسلمان نقل مکانی پر مجبور ہوئے ۔ جو اس وقت عارضی کیمپوں میں رہائش پذیر ہیں ان میں خواتین کی بڑی تعداد بھی شامل ہے جنہوں نے بڑی مشکل سے ہندو جتھوں سے اپنی جان بچائی ۔ متاثرہ خواتین نے بھارتی ٹی وی سے گفتگو میں خوف کے ان لمحات کو بیان کیا۔ ایک اور خاتون نے بتایا کہ بلوائیوں نے جب گھروں کو آگ لگائی تو چنگاری سے اُس کی بیٹی زخمی ہو گئی۔ دیگر خواتین نے بھی خود پر گزرنے والی قیامت صغریٰ کی داستان سنائی اور مستقبل کے بارے میں فکرمند نظر آئیں ۔ عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ نئی دہلی میں ہونے والے فسادات بی جے پی  کی مسلم مخالف پالیسیوں کا تسلسل ہے جس پر تاریخ  مودی کو کبھی معاف نہیں کرے گی۔