Saturday, December 4, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

مقناطیسی قوت کی وجہ سے زمین پر زندگی کا وجود ہے: سائنسدان

مقناطیسی قوت کی وجہ سے زمین پر زندگی کا وجود ہے: سائنسدان
September 2, 2015
نیویارک (ویب ڈیسک) یونیورسٹی آف روچسٹر سے وابستہ ارضیاتی طبیعات کے ماہرین نے کہا ہے کہ زمین کی مقناطیسی قوت سورج سے آنے والی تابکار لہروں سے تحفظ دے کر اس سیارے پر زندگی کی ضمانت فراہم کرتی ہے۔ اگر ایسا نہ ہو تو زمین پر نہ کوئی کرہ ہوائی ہو اور نہ ہی پانی اپنا وجود قائم رکھ سکے۔ یونیورسٹی سے وابستہ ایک سائنسدان نے کہا ہے کہ اگر سیارہ زمین کے پاس یہ قوت نہ ہوئی تو شاید ہمارا سیارہ بانجھ ہوتا اور یہاں زندگی ممکن نہ ہوتی۔ ماہرین کے مطابق سورج پر جاری انتہائی طاقتور فیوژن ری ایکشن کے نتیجے میں ہر لمحے اربوں تابکار ذرات زمین کی جانب لپکتے ہیں مگر زمینی مقناطیسی قوت ان ذروں کے زمین کی سطح تک پہنچنے سے پہلے ہی ان کی راہ تبدیل کر دیتی ہے اور یہی وجہ ہے کہ زمین پر زندگی ممکن ہے۔ ہمارے نظام شمسی میں موجود سورج ہر لمحے کھربوں تابکار ذرات زمین کی طرف پھینکتا ہے مگر زمینی مقناطیسی قوت انہیں اپنے قریب نہیں آنے دیتی۔ سائنسدانوں کے مطابق مقناطیسی قوت کی عدم موجودگی میں زمین پر زندگی کا ارتقا اور نمو کسی بھی طور ممکن نہیں تھے۔ یہ مقناطیسی قوت سیارہ مریخ کے پاس بھی تھی مگر نامعلوم وجوہات کی بنا پر چار ارب برس قبل مریخ اپنی یہ قوت کھو بیٹھا تھا۔ محققین کے مطابق ایک وقت تھا جب مریخ بھی کثیف کرہ ہوائی اور سمندروں کا حامل تھا مگر مقناطیسی قوت کھوتے ہی سورج سے آنے والی طاقتور تابکار ہواو¿ں نے اس کا کرہ ہوائی چھیل کر رکھ دیا اور پانی کے مالیکیول ٹوٹ گئے۔