Friday, November 26, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

مصری پروفیسر نے سابقہ بیوی تک خط پہنچانے کیلئے طیارہ ہائی جیک کر لیا

مصری پروفیسر نے سابقہ بیوی تک خط پہنچانے کیلئے طیارہ ہائی جیک کر لیا
March 29, 2016
قاہرہ (ویب ڈیسک) مصری طیارے کی ہائی جیکنگ کا ڈرامہ ختم ہو گیا۔ ہائی جیکرنے گرفتاری دے دی۔ ملزم قاہرہ یونیورسٹی کا پروفیسر نکلا جو اپنی سابقہ اہلیہ تک خط پہنچانا چاہتا تھا۔ تفصیلات کے مطابق مصری طیارے کا ہائی جیکر دہشت گرد نکلانہ اس کے کوئی اور گھناو¿نے مقاصد تھے۔ اس کا تو ایک ہی معصوم سا مطالبہ تھا کہ اس کا خط اس کی سابقہ اہلیہ تک پہنچا دیا جائے۔ دنیا بھر میں میڈیامیں صبح سے اس خبر نے تھرتھلی مچائے رکھی کہ مصری ائیرلائن کے طیارے کو اسکندریہ سے قاہرہ جاتے ہوئے ہائی جیک کر لیا گیا۔ مغربی میڈیا کے مطابق صرف ایک دہشت گرد نے طیارے کو ہائی جیک کیا جس نے اپنے جسم کے گرد دھماکہ خیز مواد باندھ رکھا ہے۔ ہائی جیکر طیارے کو استنبول لے جانا چاہتا تھا تاہم پائلٹ نے ایندھن کی کمی ظاہر کرکے طیارہ قبرص میں اتارا۔ موقع کی نزاکت دیکھتے ہوئے قبرص ایئرپورٹ پر کرائسز ٹیم تعینات کر دی گئی تاہم تھوڑی ہی دیر بعد ہائی جیکر نے طیارے سے عورتوں اور بچوں سمیت تمام مسافروں کو نکال دیا مگر عملے اور پانچ غیرملکی مسافروں کو یرغمال بنا لیا۔ قبرص کے میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ ہائی جیکر نے اپنی سابقہ بیوی کو پیغام دینے کےلئے طیارہ اغوا کیا۔ یہ اطلاع ملنے پر اس کی بیوی کوبھی قبرص کے حکام نے ایئرپورٹ پر بلایا لیکن اس سارے ڈرامے کا ڈراپ سین اس وقت ہو گیا جب ہائی جیکر نے اچانک خود ہی گرفتاری دےدی جس کے بعد پتہ چلاکہ ہائی جیکر کا نام سیف الدین مصطفیٰ ہے اور وہ قاہرہ یونیورسٹی کا پروفیسر ہے۔ قبرص کے وزیر خارجہ کے مطابق پروفیسرکی ذہنی حالت بھی درست نہیں۔