Saturday, January 22, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کے بعد تحریک انصاف کی قیادت بھی لندن یاترا پر، سیاسی حلقوں میں بحث جاری

مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کے بعد تحریک انصاف کی قیادت بھی لندن یاترا پر، سیاسی حلقوں میں بحث جاری
April 14, 2016
لاہور (نائنٹی ٹو نیوز) پاناما لیکس کے بعد ملکی سیاست میں بظاہر تو کوئی تبدیلی نہیں آئی لیکن ایک سیاسی ہلچل اور بے چینی صاف محسوس کی جا سکتی ہے جس کی واضح مثال ایک کے بعد ایک سیاست دان کی لندن روانگی ہے۔ مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کے بعد تحریک انصاف کی قیادت بھی لندن یاترا پر نکل پڑی۔ پاناما پیپرز کے منظرعام پر آنے کے بعد پاکستانی بڑوں کی برطانوی شہر میں ایک ساتھ موجودگی کسی پلان کا نتیجہ ہے یا محض اتفاق سیاسی حلقوں میں بحث جاری ہے۔ ایک ہی وقت میں پاکستانی سیاست کے اہم مہروں کا برطانیہ میں جمع ہونا محض اتفاق ہے یہ بات ہضم کرنا ذرا مشکل ہے لیکن نوازشریف اور عمران خان سمیت ہر سیاستدان کا دعویٰ ہے کہ ان کا یہ دورہ پہلے سے طے تھا۔ لندن کی یہ بیٹھک سیاست میں کیا تبدیلی لائے گی یہ آنے والے چند روز میں ہی واضح ہو گا۔ دریں اثنا موجودہ ملکی صورتحال میں لندن جانے والی پی آئی اے کی پرواز اہم بن گئی۔ لاہور کے علامہ اقبال انٹرنیشنل ائیرپورٹ سے روانہ ہونے والی  پرواز پی کے سیون فائیو سیون میں چئیرمین تحریک انصآف عمران خان، جہانگیر ترین اور علیم خان کے ساتھ سوار ہوئے جبکہ اسی فلائٹ میں وزیر داخلہ چودھری نثار اور ان کی اہلیہ بھی موجود ہیں۔ دونوں رہنمائوں کی نشستوں میں زیادہ فرق بھی نہیں ہے۔ پی آئی اے کی اس پرواز میں وزیراعلی پنجاب کے اہلخانہ بھی لندن جانے کے لیے سوار ہیں جبکہ آصف علی زرداری اور پیپلزپارٹی کے بعض اہم رہنما پہلے سے ہی لندن میں ہیں۔