Sunday, January 23, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

متحدہ کو پارلیمانی تاریخ کی بد ترین ناکامی کا سامنا ، صرف ایک امیدوار سینیٹر منتخب

متحدہ کو پارلیمانی تاریخ کی بد ترین ناکامی کا سامنا ، صرف ایک امیدوار سینیٹر منتخب
March 3, 2018

کراچی ( 92 نیوز ) سینیٹ انتخابات کے دوران متحدہ کو پارلیمانی تاریخ کی بد ترین ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ۔

متحدہ قومی موومنٹ کے بکھرے دھڑے خاطر خواہ کامیابی نہ دکھا سکے اور ایم کیو ایم کی جانب سے صرف فروغ نسیم کامیاب قرار پائے ۔

پہلی گنتی میں فروغ نسیم کو شکست زدہ قرار دیا گیا مگر دوبارہ گنتی میں  فروغ نسیم کامیاب قرار دے دیئے گئے ۔سندھ کی 12 نشستوں میں سے پیپلزپارٹی نے 10 حاصل کر لی ، ایک نشست فنکشن لیگ نے جیت لی۔

سینیٹ انتخابات میں ایم کیو ایم کو 35 سالہ تاریخ  میں بدترین شکست کا سامنا کرنا پڑ گیا۔  ماضی میں 4 نشستیں رکھنے والی جماعت کو سینیٹ الیکشن میں صرف ایک نشست نصیب ہوئی، وہ بھی ووٹ کی بجائے  ٹیکنیکل سپورٹ سے جیتی گئی ۔

کامران ٹیسوری پر تقسیم ہونے والی متحدہ متحد نہ ہوئی ۔ فاروق ستار اور خالد مقبول ساتھ بیٹھ کر بھی دور نظر آئے اور  سینیٹ انتخابات میں ایم کیو ایم نے ایم کیو ایم کا مقابلہ کیا ۔

کسی نے دغا کیا، کسی نے ساتھ چھوڑا تو کوئی عین وقت پر بازی پلٹ گیا ۔  ایم کیو ایم کی کشتی کو غیروں نے نہیں  اپنوں نے ہی ڈبو دیا۔