Tuesday, September 27, 2022

ماہرین صحت نے 100فیصد اثرات رکھنے والی ایبولا ویکسین دریافت کر لی

ماہرین صحت نے 100فیصد اثرات رکھنے والی ایبولا ویکسین دریافت کر لی
لاہور (92نیوز) دنیا بھر کیلئے خطرہ سمجھا جانے والے ایبولا وائرس کیخلاف ماہرین نے ایک ایسی ویکسین تیار کر لی ہے جس سے اس ہولناک وائرس سے نجات پانا ممکن ہو گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق عالمی ادارہ صحت نے کہا ہے کہ نئی ویکسین پر ہونے والے تجربات 100 فیصد موثر ثابت ہوئے ہیں۔ اس نئی ویکسین کا تجربہ ابتدائی طور پر گنی میں 4ہزار ایبولا سے متاثرہ مریضوں پر کیا گیا۔ حیران کن طور پر مریضوں نے 10روز میں ہی بیماری پر قابو پانا شروع کر دیا۔ گلوبل ہیلتھ سے وابستہ ماہرین نے ان نتائج کو قابل ذکر اور گیم چینجر سے موسوم کیا ہے۔ عالمی ادارہ صحت کے مطابق ابتدائی نتائج اتنے امید افزا ثابت ہوئے ہیں کہ مزید تجربات روک کر اِسی ہفتے سے ویکسین کو بیماروں کے باقاعدہ علاج کےلئے استعمال کرنا شروع کر دیا گیا ہے۔ ایبولا کا وائرس چند خطرناک ترین ”وائرسز“ میں سے ایک ہے جسے ”ہیمرہیج فیورز“ (گردن توڑ بخارکی ایک قسم) بتایا جاتا ہے۔ ویکسین کو ”وِی ایس وِی-اِی بی او وِی“ کا نام دیا گیا۔ واضح رہے کہ گزشتہ برس ایبولا کی بیماری نے مغربی افریقہ کو اپنی لپیٹ میں لے لیا تھا جس سے 11ہزار سے زائد افراد موت کے گھاٹ اتار گئے۔ سب سے زیادہ اموات لائبیریا، گنی اور سیرالیون میں واقع ہوئیں۔