Friday, September 30, 2022

ماڈل ٹاؤن انکوائری رپورٹ سامنے لانے سے متعلق فیصلہ محفوظ

ماڈل ٹاؤن انکوائری رپورٹ سامنے لانے سے متعلق فیصلہ محفوظ

لاہور (92 نیوز) لاہور ہائیکورٹ نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کی جوڈیشل انکوائری رپورٹ منظر عام پر لانے کے سنگل بنچ فیصلے کے خلاف دائر حکومتی انٹراکورٹ اپیل پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔
لاہور ہائیکورٹ میں سانحہ ماڈل ٹاؤن کی جوڈیشل انکوائری رپورٹ منظر عام پر لانے کے سنگل بنچ فیصلے کے خلاف دائر حکومتی انٹراکورٹ اپیل پر سماعت ہوئی۔ سماعت میں عدالت نے حکومتی انٹراکورٹ اپیل پر فیصلہ محفوظ کر لیا
عدالت نے ریمارکس دیئے کہ کوشش کریں گے جلد از جلد سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ منظر عام پر لانے یاں نہ لانے سے متعلق فیصلہ سنائیں۔
دوسری طرف حکومتی وکیل خواجہ حارث کے جواب الجواب کے لیے دلائل مکمل کر لیے گئے۔
پاکستان عوامی تحریک کے رہنما خرم نواز گنڈا پور نے میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ امکان ہے کہ حکومت نے رپورٹ میں اپنی مرضی کی تبدیلیاں کر دی ہیں۔
جسٹس عابد عزیز شیخ کی سربراہی میں فل بنچ کیس کی سماعت کی حکومتی اپیل میں اپیل کنندہ اور سانحہ ماڈل ٹاؤن متاثرین کے وکلاء دلائل مکمل کر چکے ہیں۔